راہل گاندھی نے گجراتی کھانے کا لطف اٹھایا

13 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

یو این آئی
احمد آباد//ہتک عزت کے ایک مقدمے میں پیشی کے لیے یہاں آنے والے راہل گاندھی نے آج سرکٹ ہاؤس میں اپنا متعینہ دوپہر کا کھانہ چھوڑ کر گجراتی کھانے کا لطف اٹھانے کے لیے لاء گارڈن علاقے میں ایک مشہور ریستوران میں پہنچ گئے ۔ مسٹر گاندھی نے اس سے قبل سنہ 2017 میں اسمبلی انتخابات کی تشہیر کے دوران بھی سواتی اسنیکس نام کے ریستوران میں گجراتی کھانوں کا لطف اٹھایا تھا۔وہ دوپہر تقریباً 12:30 بجے ہوائی اڈے پر پہنچے اور اس کے بعد وہ سرکٹ ہاؤس کے لیے روانہ ہوگئے جہاں ان کے لے ظہرانے کا انتظام تھا لیکن انہوں نے اچانک یہ پروگرام بدل دیا۔ انہوں نے عدالت کی جانب جانے والے راستے پر واقع اس ریستوران کا رخ کیا۔ ان کے ساتھ کانگریس کے قدآور رہنما احمد پٹیل، شکتی سنگھ گوہل، گجرات کانگریس کے صدر امت چاؤڑا، لیڈر آف اپوزیشن پریش دھانانی،ڈپٹی لیڈر آف اپوزیشن شیلیش پرمار اور سابق صدر ارجن موڈھواڈیا اور بھرت سنگھ سولنکی بھی موجود تھے ۔ مسٹر سولنکی نے کہا کہ گجراتی کھانوں کے تئیں محبت کی وجہ سے مسٹر گاندھی نے سرکٹ ہاؤس کی بجائے پرائیویٹ ریستوران کا رخ کیا۔ مسٹر پرمار نے بتایا کہ انہوں نے پھڑانی کھچڑی، ڈھوکلا وغیرہ گجراتی کھانوں کا مزہ لیا اور ناریل کا پانی بھی نوش کیا۔ انہوں نے وہاں موجود عام گاہکوں کے ساتھ سیلفی بھی لی۔ 
 

تازہ ترین