دفتری طوالت ختم کرنے کیلئے گورنر انتظامیہ حرکت میں

فائلوں کو نمٹانے کیلئے صرف 3مراحل مقرر، ضلع ترقیاتی کمشنروں کو بھی پابند بنایا گیا

10 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

بلال فرقانی
 سرینگر//گورنر انتظامیہ نے دستاویزات و فائلوں کو نپٹانے میں دفتری طوالت ختم کرنے کیلئے بیروکریٹوں اور سرکاری افسران کو معیاد بند وقت کے دوران کارروائی کرنے کا حکم نامہ جاری کیا ہے،جبکہ ضلع ترقیاتی کمشنروں کو  ہدایت دی ہے کہ کام کی تقسیم اس طرح کی جائے کہ با اختیار سطح تک پہنچنے سے قبل یہ فائیلیں 3سے زیادہ مراحل تک نہ گذریں ۔ سرکاری دفاتروں بشمول سیول سیکریٹریٹ میں انتظامی امورات کے کاموں میں سرعت لانے کیلئے گورنر انتظامیہ نے با ضابطہ طور پر ایک سرکیولرجاری کیا،جس میں کہا گیا ہے کہ سیکریٹریٹ اور فیلڈ دفاتر وں میں کئی سطحوں کی درجہ بندی کے نتیجے میں گزرنے کی وجہ سے فائلوں کو نپٹانے میں غیر معمولی تاخیر ہوتی ہے۔محکمہ انتظامی عمومی کی طرف سے اس سلسلے میں ایک سرکیولر زیر نمبر39-GAD of 2019محرر8جولائی2019جاری کیا گیا،جس میں افسران کو فائلوں کو نپٹانے میں ہدایات جاری کی گئیں۔ سرکیولر میں سیکریٹریٹ میں قائم محکموں کو ہدایات دی گئی ہے کہ فائلوں پر ہیڈ اسسٹنٹ یا سیکشن افسران سے کم عہدے کے درجے کے ملازمین  دستخط نہ کریںجبکہ سنیئر و جونیئر اسسٹنٹ صرف ریکارڈ کے حصول یا ٹائپنگ میں انکی معاونت کریں۔حکم نامہ کے مطابق سنیئر اسسٹنٹ صرف اس صورت میں فائلوں پر نوٹ کریں،جب محکمہ میں ہیڈ اسسٹنٹ تعینات نہ ہو۔ مذکورہ سرکیولر کے مطابق’’ محکمہ میں جہاں انڈر سیکریٹری و ڈپٹی سیکریٹری دونوں تعینات ہو،انتظامی سیکریٹری کام کی تقسیم کچھ اس طرح سے کریں کہ سیکشن افسر یا ہیڈ اسسٹنٹ،ڈپٹی سیکریٹری یا انڈر سیکریٹری کو فائل پیش کریں،جبکہ انڈر سیکریٹری براہ راست سپیشل سیکریٹری یا ڈپٹی سیکریٹری کو فائل پیش کریں۔‘‘ اس حکم نامہ میں مزید وضاحت کی گئی ہے’’ ڈپٹی سیکریٹری سپیشل سیکریٹری یا سپیشل سیکریٹری تعینات نہ ہو تو براہ راست انتظامی سیکریٹری کو فائل پیش کریں‘‘۔سرکیولر میں کہا گیا ہے کہ انتظامی سیکریٹری کی موجودگی میں اگر کسی محکمہ میں سیکریٹری تعینات ہو،تو وہ ڈپٹی سیکریٹری یا انڈر سیکریٹری کے درمیان کام کی تقسیم اس طرح کریں کہ وہ تمام فائیلیں محکمہ کو ایڈیشنل سیکریٹری یا سپیشل سیکریٹریوں کے دفاتروں سے گزرے بغیر سیکریٹری کو پیش کی جائیں۔ سرکیولر میں کہا گیا ہے کہ انتظامی سیکریٹری متعلقہ مشیروں کو وہ کیس پیش کریں۔ سرکیولر کے مطابق سیکشن افسران،اسٹیٹکل افسران اور اسسٹنٹ اکاونٹس افسران کو3دنوں کے اندر فائلوں و دیگر دستاویزات کی ’’نوٹنگ‘‘ کرنے کی تاکیدہے،جبکہ انڈر سیکریٹریوں،اسسٹنٹ ڈائریکٹروں،ڈپٹی سیکریٹریوں،پبلک لاء افسران اور سنیئر لاء افسران کو بھی3دنوں میں کام نپٹانے کی ہدایت دی گئی ہے۔سرکیولر میں ایڈیشنل سیکریٹریوں،سپیشل سیکریٹریوں،ڈائریکٹر فائنانس،فائنانشل مشیروں،چیف اکاونٹ افسران اور جوائنٹ ڈائریکٹروں و ڈپٹی ڈائریکٹروں کو2دنوں میں کام ختم کرنے اور ڈائریکٹروں،ڈائریکٹرجنرلوں، سیکریٹریوں،کمشنر سیکریٹریوں اور پرنسپل سیکریٹریوں کے علاوہ فائنانشل کمشنروں کو2دنوں میں ان دستاویزات کو نپٹانا ہوگا،تاہم با اختیار حکام کی منظوری کیلئے مطلع کرنے کی حد3دن مقرر کی گئی ہے۔ سرکیولر کے مطابق تمام محکموں کے سربرہاں کو ہدایت دی گئی کہ وہ کام کی تقسیم کچھ اس طرح سے کریں۔کہ کسی بھی فائل کو با اختیار مرحلے تک پہنچنے سے قبل بشمول ریکارڈ جمع کرنے کے4مراحل سے زیادہ گزرنا نہ پڑے۔ سرکیولرمیں واضح کیا گیا’’ تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں اور دیگر ضلع سطحی افسران کو بھی ہدایت دی گئی کہ کام کی تقسیم اس طرح کی جائے،کہ با اختیار اتھارٹی تک پہنچنے سے قبل دستاویزات کو3مراحل سے زیادہ گزرنا نہ پڑے۔‘‘ سرکیولر میں ضلع ،تحصیل و بلاک سطحوں کے افسران کو بھی ہدایت دی گئی کہ دفتری کاموں کی تقسیم اس طرح کی جائے،کہ با اختیار اتھارٹی تک پہنچنے سے قبل اس کو2مراحل سے زیادہ گزرنا نہ پڑے۔
 

تازہ ترین