تازہ ترین

محکمہ بجلی کی نجکاری معیشت کو زک پہنچانے کا منصوبہ: فاروق ڈار

ملازمین کے ہڑتال کے اعلان کی حمایت

9 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

بلال فرقانی
سرینگر// کشمیر اکنامک الائنس نے محکمہ بجلی کی نجکاری کو براہ راست ریاست کی معیشت کو زک پہنچانے سے تعبیر کرتے ہوئے ملازمین کی ہڑتا ل کی حمایت کا اعلان کیا۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کشمیر اکنامک الائنس کے شریک چیئرمین فاروق احمد ڈار نے کہا کہ ایک منصوبے کے تحت جموں وکشمیر بالخصوص وادی کی معیشت پر چوٹ کی جا رہی ہے تاکہ کشمیریوں کی کمر توڑی جائے۔انہوں نے کہا’’ نئی دہلی چاہتی ہے کہ کشمیری عوام دہلی کے پاس کشکول لیکر آئے،اس لئے یہاں کے وسائل کو لوٹا جا رہا ہے‘‘۔ڈار نے کہا کہ نجی کمپنیاں بے روز گاری کو دور کرنے میں بالکل ناکام رہی ہیں بلکہ کمپنیوں میں کام کررہے کامگار انتہائی کم اجرت پر مامور کئے جاتے ہیں اور یوںانہیں مالی استحصال کا شکار بنایا جارہاہے ۔انہوںنے کہاکہ ’ محکمہ بجلی کو نجی سیکٹر میں تبدیل کرنے کا منصوبہ ملازم دشمن ہونے کے ساتھ ساتھ عوام دشمن بھی ہے ،ایسا کرنے سے بجلی فیس میں بے تحاشا اضافہ ہو گا اور اسکی ادائیگی ایک عام صارف کی پہنچ اور قوت سے باہر ہوگی‘‘۔ انہوںنے خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ اس ضمن میں ریاستی عوام اپنی ہی سر زمین ،جہاں سے بجلی پیدا ہوتی ہے ،بجلی کی سہولیات سے محروم رہے گی ۔محکمہ بجلی کے ملازمین کی طرف سے دی گئی ہڑتال کی حمائت کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ’ بجلی کی نجکاری کی وجہ سے صارفین کے فیس میں اس قدر اضافہ ہوگا کہ بجلی کا نام لینے پر بھی لوگوں کو رقومات ادا کرنے پڑینگی ‘۔انہوں نے کہا کہ بجلی کی نجکاری سے جہاں ملازمین بجلی اور محکمہ بجلی کا وجود ہی مٹ جائے گا،وہی بجلی غریب عوام کی قوت خریداری سے باہر ہوجائے گی۔ان کا کہنا تھا کہ نامسائد حالات اور سیلاب کے بعد کشمیری عوام پہلے ہی قرضوں تلے دبے ہوئے ہیں۔