تازہ ترین

جگتی کیمپ میں احتجاجی مظاہرہ

9 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

جموں //جگتی ٹینمینٹ کمیٹی کی جانب سے زیر قیادت پیارے لعل ٹھسو جگتی کیمپ میں ایک ہنگامی اجلاس منعقد کیا گیا ۔ایک بیان کے مطابق اجلاس میں کیمپ میں پینے کے پانی کی سپلائی،راشن سپلائز، صحت و صفائی اور بجلی سپلائی کی بے قاعدگی پر برہمی کا اظہار کیا گیا ۔اجلاس کے بعد شرکا نے بنیادی سہولیات کے فقدان کے خلاف ایک احتجاجی مظاہرہ کیا ۔علاوہ ازیں ، مظاہرین نے نام نہاد کارڈی نیشن کمیٹی کے مفاد خصوصی کی جانب سے حریت کے ساتھ ملاقات پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہ کہ انہیںوادی میں ٹائون شپ کی کوئی ضرورت نہیں ہے کیونکہ وہ اپنے آبائی مقامات پر رہائش کے حق میں ہیں ،جہاں سے وہ 1990کو اجڑ کر آئے تھے۔JTC/SKF کے صدر شادی لعل پنڈتا نے انکی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ کشمیری پنڈتوں کے بارے میں کوئی بھی باز آباد کاری/سیٹلمنٹ کی کوئی اتھارٹی نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ مائیگریشن کے دن سے ہی ہم  اننت ناگ، بارہمولہ اور سرینگر میں تین سیٹلائٹ ٹائون شپ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔انہوں نے طبقہ کے لئے تین پارلیمانی نشستیں اور10اسمبلی نشستین طبقہ کیلئے مخصوص رکھنے کا مطالبہ کیا۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے راج کمار تکو اور سنیل کول نے سرکار سے مائیگرنٹوں کی  وادی میں چھوڑی گئی جائیدا کا  سالانہ4لاکھ روپے کا ایکس گریشیا جاری کرنے کا مطالبہ کیا۔اسکے علاوہ ماہانہ ریلیف میں اضافہ کرکے اسے  25000/ روپے کرنے  اور وزیر اعظم پیکئیج کو پورا کرنے اور تعلیم یافتہ نوجوانوں کیلئے 7000 ۔اسامیاں اور درجہ چہارم کی3000 اضافی اسامیاں منظور کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا ۔مظاہرین میں کاشی ناتھ بھٹ، تیج کرشن ، متھن پنڈتا، پریم ناتھ پنڈتا، وجے کمار، آر یل دھر، سی ایل بھٹ، ایس کے بھٹ، آر کے رینہ، سی ایل پنڈتا ،اے کے بھٹ ،وی کے بخشی و دیگران بھی شامل تھے۔