تازہ ترین

جی ایس ٹی کے نفاذ کیخلاف تاجروں کا لکھن پور ٹول پلازہ پر احتجاج

9 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

 جموں// ریاست جموں و کشمیر میں جی ایس ٹی لاگو کرنے کے دوسرے سال پرٹریڈرس کی ایک بھاری تعداد نے وئیر ہاوس/نہرو مارکیٹ ٹریڈرز فیڈریشن کے بینر تلے لکھن پور ٹول ٹیکس ہٹانے کے مطالبہ کو لیکر احتجاج کیا۔مظاہرین کی قیادت فیڈریشن کے صدر رتن لعل گپتا اور جنرل سیکرٹری دیپک گپتا کر رہے تھے۔ مظاہرین وئیر ہائوس کے مین گیٹ پر دھرنے پر بیٹھ گئے اور ریاست میں8جولائی2017 کو گی ایس ٹی لاگو کرنے کے باوجود لکھن پور ٹول ٹیکس کو نہ ہٹانے کے خلاف ناراضگی کا اظہار کیا۔ مظاہرین نے لکھن پور ٹول ٹیکس ختم کرنے کے مطالبہ کا اعادہ کیا۔فیڈریشن کے جنرل سیکرٹری دیپک گپتانے کہا کہ ریاست میں جی ایس ٹی ’’ایک ملک ،ایک ٹیکس ‘‘ کے نعرے کے ساتھ لاگو کیا گیا لیکن افسوس کی بات ہے کہ ریاست جموں و کشمیر میں اس نعرے کو ابھی تک لاگو نہیں کیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ جی ایس ٹی لاگو ہونے کے باوجود ریاستی سرکا رلکھن پور اینٹری پوائنٹ پر ہی ریاست کے سامان پر ٹول ٹیکس لگاتی ہے ،جو کہ دوہرا ٹیکس ہے۔انہوں نے سرکار سے متنبہ کیا کہ ٹول ٹیکس کو ہٹایا جائے بصورت دیگر ٹریڈرز سڑکوں پر آنے کو مجبور ہو جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ لکھن پور میں ٹول ٹیکس کی وجہ سے ریاست میں سامان مہنگا ہو اجاتا ہے،جسکا اثرعام لوگوں پر پڑتا ہے۔انہوں نے عوام کے مفاد کی خاطر کھن پور ٹول پوسٹ کو فوری طور سے بند کرنے کا مطالبہ کیا،ٹریڈر برادری نے ریاست کے گورنرسے اپیل کی کہ اس معاملہ کو سنجیدگی سے لیا جائے اور متعلقہ محکمہ سے لکھن پور ٹول پلازہ پر ٹول ٹیکس نہ لگانے کی ہدایت دے۔مظاہرین میں ٹریڈرز فیڈریشن ویر ہائوس،نہرو مارکیٹ کے  سینئر نائب صدر دھیرج گپتا،  نائب صدر منیش مہاجن، سیکرٹری ابھیمنیو گپتا، خزانچی وشال گپتا، کیرتی گپتا، راجیش بگھوترہ، اتل کھننہ، اوم پرکاش گپتا، شام لعل گپتا، جی ایس کوہلی، رمیش چندر گپتا، وجے گپتا، راجیش گپتا، راجو گپتا، انیل گپتا و دیگران بھی موجود تھے۔