ورلڈ کپ:2019 | سیمی فائنل میں جگہ پکی کرنے اترے گا نیوزی لینڈ

پاکستان کرے گا ٹورنامنٹ میں بنے رہنے کی کوشش

26 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

یو این آئی
برمنگھم// آئی سی سی ورلڈ کپ میں مضبوط رہ کر ٹیبل میں سرفہرست مقام پر قابض نیوزی لینڈ بدھ کو آخری امید کے لیے جدوجہد کر رہی پاکستان کی رکاوٹ کو پار کر سیمی فائنل میں جگہ پکی کرنے کے ارادے سے اترے گی۔نیوزی لینڈ نے اپنے گزشتہ چھ میچوں میں پانچ میچ جیتے ہیں جبکہ ہندستان کے ساتھ اس کا میچ بارش سے منسوخ رہا تھا اور وہ 11 پوائنٹس کے ساتھ سب سے اوپر ہے ۔ وہیں پاکستان نے اتار چڑھاو کے دور کے بعد کچھ لے حاصل کی ہے لیکن اس کے لیے باقی تمام میچ کرو یا مرو کی حالت والے ہو گئے ہیں۔ وہ چھ میچوں میں دو ہی جیت سکی ہے اور تین ہارے ہیں جبکہ ایک میں کوئی نتیجہ نہیں نکلا ۔ وہ پانچ پوائنٹس لے کر ساتویں نمبر پر ہے ۔پاکستانی ٹیم کو جنوبی افریقہ کے خلاف گزشتہ میچ میں ملی جیت کے بعد کچھ امید بندھی ہے اور وہ فی الحال مقابلے میں بنی ہوئی ہے ۔ اگرچہ نیوزی لینڈ سے میچ جیتنا اس کے لیے اب لازمی ہو گیا ہے اور ہارنے کی صورت میں اس کا بوریا بستر بندھ جائے گا۔روایتی حریف ہندستان سے ہارنے کے بعد پاکستانی ٹیم کو خاصی تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا لیکن افریقی ٹیم کے خلاف 49 رنز سے ملی جیت نے اس کا اعتماد لوٹایا ہے ۔ سرفراز احمد کی ٹیم کو اگرچہ ٹورنامنٹ کی سب سے مضبوط ٹیم نیوزی لینڈ کے خلاف خاصی محنت کرنی پڑے گی۔فاسٹ بولر محمد عامر نے اب تک ٹیم کے لئے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور 15 وکٹ کے ساتھ ٹورنامنٹ کے ٹاپ بولر بنے ہوئے ہیں، لیکن پاکستان کا بلے بازی آرڈر فلاپ ثابت ہورہا ہے ۔پاکستان اگرچہ الٹ پھیر میں مہارت رکھتا ہے اور کئی بار حریف کو چونکا دیتا ہے ۔ جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیم نے ماضی کی غلطیوں میں سدھار کرتے ہوئے ہر شعبہ میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا۔ لیکن ٹیم کے سینئر کھلاڑیوں نے کافی مایوس کیا ہے ۔ سب سے تجربہ کار شعیب ملک کی فارم میں تسلسل کی سب سے زیادہ کمی ہے تو ٹیم کا فیلڈنگ شعبہ انتہائی خراب ہے ۔ہندستان اور جنوبی افریقہ کے خلاف گزشتہ میچ میں بھی کھلاڑیوں نے کئی کیچ ڈراپ کئے اور وکٹ کے پیچھے سرفراز نے بھی کئی اہم موقعوں پر مایوس کیا ہے ۔ بلے بازوں میں حارث سہیل نے لیکن اچھی واپسی کی ہے جنہیں اوپننگ میچ کے بعد ٹیم سے باہر کر دیا گیا تھا۔ گزشتہ میچ میں انہوں نے 89 رنز کی سب سے بڑی اننگز کھیلی تھی۔ وہیں امام الحق، فخر زمان اور بابر اعظم سے افریقہ کے خلاف کارکردگی کو برقرار رکھنے کی توقع رہے گی۔
 

تازہ ترین