تازہ ترین

۔3 برسوں میں 733جنگجو جاں بحق

۔ 112شہری اور 200سے زائد فورسز اہلکار بھی ہلاک

26 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
نئی دہلی // حزب المجاہدین کمانڈر برہان وانی کی 2016میںہلاکت کے بعد جنگجویانہ سرگرمیوں کی نئی لہر کے دوران ابتک 733جنگجو جاں بحق ہوچکے ہیں۔ اس دوران 112شہری بھی ہلاک ہوئے ہیں۔2014سے 2018تک 838جنگجو مارے گئے جبکہ اس دوران 4برسوں میں 183 شہری اور 316سیکورٹی فورسز اہلکار بھی مارے گئے ہیں۔لوک سبھا میں وزیر مملکت برائے امور داخلہ جی کشن ریڈی نے ایک تحریری ضواب میں کہا کہ مرکزی سرکار نے دہشت گردی کے تئیں زیرو ٹالرنس کی پالیسی اختیار کی ہے۔سیکورٹی فورسز دہشت گردی کیخلاف موثر اور لگاتار کارروائیاں کررہی ہیں،اسکی بدولت ایسے واقعات میں بدلائو نظر آرہا ہے، ہلاکتوں کے حوالے سے بھی تبدیلی آرہی ہے۔انہوں نے کہا کہ جنوری 2019سے لیکر 16جون 2019تک 113جنگجو مارے گئے۔ سال 2018میں جنگجوئوں کی ہلاکتوں کی تعداد 257رہی،2017میں 213اور 2016میں 150جنگجو جاں بحق ہوئے۔انکا کہنا تھا  اس مدت کے دوران 112شہری بھی جان سے گئے۔وزیر مملکت کا کہنا تھا کہ سیکورٹی فورسز اُن افراد پر کڑی نظر رکھ رہی ہے جو جنگجوئوں کو ممد و اعانت فراہم کرتے ہیں اور نشاندہی کے بعد انکے خلاف کارروائی کی جاتی ہے۔ادھر وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ 2014کے بعد 316فورسز اہلکار بھی مارے گئے۔2014کے بعد 61اہلکار 2018میں،70اہلکار 2017میں،71اہلکار 2016میں،34اہلکار 2015میں اور71اہلکار 2014میں مارے گئے ہیں۔