تازہ ترین

مال مویشیوں کے ڈھوک لے جانے پر روک

ڈوڈہ میں خانہ بدوش گوجر بکروالوں کا احتجاج

25 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نصیر احمدکھوڑا
ڈوڈہ// ڈوڈہ ضلع کی کاستی گڑھ علاقوں سے مال مویشی کی اونچی پہاڑیوں اورڈھوکوںپر منتقلی پرانتظامیہ اورپویس نے روک لگا دی ہے جس کے خلاف متعدد افراد نے ڈوڈہ میں اپنا احتجاج بلند کیا جس میں گدی لوگوں کے علاوہ خانہ بدوش گجر بکروال طبقہ کے لوگ بھی شامل تھے۔ان لوگوں کا الزام ہے کہ علاقہ کاستی گڑھ کے منڈھار لاڑی، پوتی سولی چکرا زاژن ودیگر علاقوں سے کافی تعداد میں لوگ جن میں بچے بزرگ، خواتین شامل ہیں،دیسہ کی ہشواردھار ، آگاش منڈے، پوش مت، شوپڑشالی ودیگر اونچی ادھواروں پر اپنا مال مویشی جن میں گائے ، بھینس ، بیل، بھیڑیں، بکریاں ، گھوڑے لے جارہے تھے کہ گئی میں پولیس نے ان کو جانے کی اجازت نہیں دی اور آج دس دن مسلسل گزر گئے لیکن ان کو اجازت نہیں جارہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ وہ دس روز سے اپنے مال مویشی کے ہمراہ گئی دیسہ کے آس پاس رُکے ہوئے ہیں اوران کے ساتھ چھوٹے چھوٹے بچے اور بزرگ بھی ہیں۔ان لوگوں کا الزام ہے کہ آج دس دن گذرنے کے باوجود ان کو اجازت نامہ اجرا نہیں کیا جارہاہے بلکہ ٹال مٹول سے کام لیا جارہاہے۔ ان میں ایک گدی طبقہ سے وابستہ شخص نذیر احمد نے بتایا کہ کاستی گڑھ سے ان کو کبھی پولیس چوکی گئی اور وہاں سے پولیس سٹیشن ڈوڈہ اجازت نامہ کے لئے لکھاجارہا ہے اور غیرضروری کام سمجھ کر ان لوگوں کو ٹال دیاجاتاہے اور کہاجاتا ہے کہ گھر کے ہر ایک فرد کی جانچ پڑتال مطلوب ہے۔ ان لوگوں نے مزید کہا کہ گاؤں کے سرپنچ وچوکیدار اورنمبر دار وں نے پہلے یہ ان افراد کے حق میں جانچ کی ہے اور مزید اجازت نامہ دینے کی تصدیق بھی دی ہے مگر یہ سب کچھ لائے ہو ئے بھی نہ جانے ان کو اپنا مال مویشی ڈھوکوں پر جانے کیوں نہیں دیاجاتا ۔ انہوں نے کہاکہ انتظامیہ اور پولیس کے اس غیر سنجیدہ رویے کے سبب ان کا روزگار متاثر ہونے کا قوی اندیشہ ہے ۔