تازہ ترین

ریاست میں گوجروں کےساتھ استحصال کو بند کیا جائے : گوجر مہا سبھا

13 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

 جموں // انٹرنیشل گوجر مہا سبھا جموں و کشمیر کے صدر ڈاکٹر یونس چودھری نے ریاست و مرکزی سرکار سے ریاست جموں و کشمیر میں گوجر طبقہ کے ساتھ ہو رہے استحصال کو بند کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے طبقہ کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کا مطالبہ کیا۔ڈاکٹر یونس چودھری یہاں بدھ کے روز پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔انکے ہمراہ انٹر نیشنل مہا سبھا کے صدر کرنل دیو آنند گورجر اور گورجر مہا سبھا ہماچل پردیش کے صدر پرکاش راﺅ بھی تھے ۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے مرکزی و ریاستی سرکار سے ایس سی/ایس ٹی طبقہ کے لئے ترقیوں میں ریزرویشن کا فیصلہ فوری طور سے لاگو کرنے کو کہا ۔پریس کانفرس میں سرکار سے ایس ٹی کٹیگری کےلئے بین ضلعی بھرتیوں پر پابندی ہٹانے کا بھی مطالبہ کیا۔انہوں نے وضاحت کی کہ ریاست میں یہ سہولیت سرکاری ملازموں کو دی جا رہی تھی لیکن این سی /پی ڈی پی سرکار نے ایک سوچی سمجھی چال کے تحت اسے بند کیا۔ انہوں نے گورجر کےلئے ریاست میں سیاسی ریزرویشن کا بھی مطالبہ کیا اور اکہا کہ اسے تیس سال قبل مہیا کیا ہوتا۔انہوں نے اس سلسلہ میں موجودہ ریاستی اور مرکزی سرکار کے مثبت رول کی ستائش کی ہے۔انہوں نے مرکزی سرکار سے فوج میں گورجر ریجمنٹ قائم کرنے اور گورجر نوجوانوں کےلئے سنترل سیکورٹی فورسز میں خصوصی بھرتی منعقد کرنے کو کہا۔انہوں نے کہا کہ گورجر نوجوان عام طور سے ہاڑی اور سرحدی علاقوں میں رہائش پذیر ہیں اور فوج میں بھرتی کےلئے موذوں ہیں۔پریس کانفرنس میں گوجری زبان کو آئین ہند کے 8ویں شیڈول میں شامل کرنے کا مطالبہ کیا ،جسکی جے اینڈ کے سرکار نے2012 میں ہی سفارش کی تھی ۔انہوں نے کہا کہ گوجر و بکروال طبقہ ابھی بھی تعلیمی اور قتصادی لحاظ سے پسماندہ ہیںلیکن ان کا ایک اچھا ثقافتی ورثہ ہے،جسے محفوظ رکھنے کی ضرورت ہے۔ڈاکٹر یونس نے اسمبلی اور پارلیمانی نشستوں کی حد بندی کا خیر مقدم کیا اور پیر پنجال کو علحیدہ پارلیمانی حلقہ بنانے کا مطالبہ کیا ۔انہوں نے لداخ کے طرز پر پیر پنجال ریجن کے لئے پہاڑی ترقیاتی کونسل کا بھی مطالبہ کیا۔انہوںنے ریاست میں فا رسٹ ایکٹ 2006 کو لاگو کرنے ، خانہ بدوش گورجروں کےلئے کشمیری مائیگرنٹوں کے طرز پر کالونیاں بنا کر بازآبادکاری کرنےکا بھی مطالبہ کیا۔انہوں نے طبقہ ے لئے آسان قرضہ فراہم کرکے کاروبار کے طریقہ کارکو بھی گوجروں کےلئے کھلا رکھنے کا مطالبہ کیا۔انہوں نے گوجر کالونیوں میں سڑکوںکی مرمت کرنے کا بھی مطالبہ کیا ۔کرنل دیو آنند گورجر نے توقع ظاہر کی کہ مرکزی و ریاستی سرکار طبقہ کے مطالبات کو پورا کرنے کےلئے کام کرے گی۔