تازہ ترین

مزید خبرں

12 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیول کیڈٹوں کا ڈی ڈی جی کے ساتھ تبادلہ خیال 

این سی سی کے ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل کا  این سی سی کیمپ نگروٹہ کا دورہ 

جموں // ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل این سی سی بریگیڈئیر رگھو ویر سدھوترہ نے منگل کے روز این سی سی کیمپ نگروٹہ کا دورہ کرکے ریاست جموں و کشمیر کے 486 نیول کیڈٹوں کے ساتھ تبادلہ خیال کیا۔وطن کے سپوت بریگیڈئیر رگھو ویر سدھوتر ہ نے بھی نیشنل ڈیفنس اکیڈمی جوائن کرنے سے قبل اپنی تعلیم سینک سکول نگروٹہ سے ہی حاصل کی ہے ۔ انہوںنے این سی سی کیمپ میں ریاست بھر کے10کالجوں اور 19سکولوں کے نیول کیڈٹوں سے تبادلہ خیال کیا۔انہوں نے کیڈٹوں سے کہا کہ فورسز کا کوئی مذہب نہیں ہوتا ہے اور ان کیلئے سب سے پہلے اور ہر وقت ملک سر فہرست ہوتا ہے۔انہوں نے کیڈٹوں کو ڈیفنس فورسز جوائن کرکے ملک کی خدمت کرنے کی صلاح دی ۔انہوں نے کہا کہ بھارتی ہتھیار لئے ہمیں فخر ہے۔بریگیڈئیر نے کیڈٹوں سے اپنے مسائل کیمونٹی سطح پر حل کرنے پر زور دیا ،تاکہ یہ کوئی بڑا مسلہ نہ بن سکے۔انہوں نے کہا کہ ڈیفنس کی پہلی لائن انسانی اقدار ہے،اسلئے ہمیں اچھے شہری اور اچھا ملک ہونا چاہیے۔تبادلہ خیال کے دوران کیڈٹ  پُر جوش تھے اور وی آئی پی سے سوالات پوچھنے پر بہت ہی خوش تھے، وہ بھی اپنے ہی وطن کے سپوت سے۔ این سی سی کا یہ سالانہ کیمپ 07 جون 2019 کو شروع ہوا ہے اور 16جون 2019 کو اختتام پذیر ہوگا۔کیمپ فسٹ جے اینڈ کے نیول یونٹ این سی سی ،سرینگر کی جانب سے تحت لیفٹننٹ کماڈور کے کے سنگھ چلا یا جا رہا ہے،جنھوں نے ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل کی جانب سے تبادلہ خیال کی نشست منعقد کرنے کی کافی ستائش کی۔
 
 
 

 رسانہ نابالغ لڑکی قتل معاملہ میں تفتیش کی ضرورت

نیوز ڈیسک
 
جموں//اسٹیٹ لیگل ایڈ کمیٹی جموں وکشمیر کے اس کے ایکزیکیوٹیو چیئرمین پروفیسر بھیم سنگھ کی صدارت میں میٹنگ ہوئی جس میں جموں وکشمیر کے کٹھوعہ میں اپریل مہینہ میں نابالغ لڑکی کے قتل اور عصمت دری سے متعلق حقائق اور حالات پر غور و خوض کیا گیا ۔ میٹنگ میں کہا گیا کہ نابالغ لڑکی کے معاملہ کے حقائق اور حالات عدلیہ کی خصوصی توجہ کے حقدارہیں اور یہ محسوس کیا جاتا ہے کہ اس وحشیانہ معاملہ کی کسی آزاد تفتیشی ایجنسی خواہ وہ سی بی آئی ہو یا دیگر سے سپریم کورٹ کی نگرانی میں تفتیش کرائی جانی چاہئے۔اسٹیٹ لیگل ایڈ کمیٹی ، جموں وکشمیر نے یقین دلایا کہ تفتیشی ایجنسی کو دفن سازش تک پہنچنے میں مکمل تعاون کا یقین دلایا۔میٹنگ میں جموں وکشمیر حکومت کے ساتھ ساتھ مرکزی حکومت سے اس معاملہ کی نگرانی کے لئے ایک نئی کمیٹی قائم کئے جانے کی اپیل کی گئی جو انصاف اور قانون کی حکمرانی کے حق میں ہوگا ۔ اسٹیٹ لیگل ایڈ کمیٹی ، جموں وکشمیر کے ایکزیکیوٹیو چیئرعین ، سپریم کورٹ کے سینئر وکیل اور سپریم کورٹ بار ایسو ایسی ایشن کے ایکزیکیو رکن بھیم سنگھ نے تمام وکلا اور قانونی پیشہ سے وابستہ ساتھیوں سے پرزور اپیل کی کہ وہ حقائق ، حالات بشمول ریاستی حکومت کی رعونت پر غور کریں جو رسانہ قتل معاملہ سے متعلق ڈسٹرکٹ کورٹ کے فیصلہ کے صفحات سے مظہر ہے۔