تازہ ترین

کے کے شرما نے جموں میں بجلی اور پینے کے پانی کی سپلائی صورتحال کا جائزہ لیا

10 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
 
جموں//گورنر کے مشیر کے کے شرما نے اتوار کو یہاں ایک میٹنگ طلب کر کے محکمہ بجلی کی مجموعی کارکردگی اور جموں صوبے میں بجلی سپلائی کی صورتحال کا جائزہ لیا۔میٹنگ کے دوران مشیر موصوف نے بجلی کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیتے ہوئے جموں میں جاری بجلی پروجیکٹوں کے کام کے بارے میں بھی تفصیلات طلب کیں۔گورنر کے مشیر نے وزیر اعظم ترقیاتی پیکیج کے تحت جاری مختلف پروجیکٹوں کی صورتحال کا بھی جائزہ لیا۔اُنہوں نے اِن پروجیکٹوں پر جاری کام میں سرعت لانے کی ہدایت دی تاکہ اِن کو وقت مقررہ کے اندر مکمل کیا جاسکے۔اُنہوں نے کہاکہ محکمہ کو لوگوں کی اُمید وں پر کھرا اُترنے کے لئے کام کرنا چاہیئے ۔مشیرموصوف نے کہا کہ حکومت ریاست کے ہر گھر کو بجلی فراہم کرنے کی وعدہ بند ہے اور اس سلسلے میں پردھان منتری سہج بجلی ہر گھر یوجنا کے تحت اقدامات کئے جارہے ہیں۔چیف انجینئر ای ایم اینڈ آر ای وِنگ جموں سدھیر گپتا نے کہا کہ محکمہ جموں خطے میں 1170میگاواٹ لوڈ کا اِنتظام کرتا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ 132/133کے وی پونی چک گرڈ سٹیشن میں ٹرانسفارمر کی گنجائش 50ایم وی اے ہے جبکہ مانگ 70ایم وی اے کی ہے۔اُنہوں نے کہاکہ اس علاقے کے صارفین کو 132/133کے وی پونی چیک گرڈ سٹیشن سے بجلی فراہم کی جاتی ہے اور شہری علاقوں میں 3سے 4گھنٹے جبکہ دُور دراز علاقوںمیں 9سے 10گھنٹے کی کٹوتی رہتی ہے اور صارفین کو اس بارے میں ہر روز اطلاع دی جاتی ہے۔میٹنگ میں دیگر افسروں کے علاوہ چیف انجینئر ای ایم اینڈ آر ای سدھیر گپتا ، چیف انجینئر پروجیکٹس منار گپتا ، ایس ای ایم اینڈ آر ای سرکل ۔I کرم چند ، ایس ای ایس اینڈ او سرکل ۔II اومیش پریہار ، ایگزیکٹیو انجینئر ایم اینڈ آر ای سکینڈ پی ڈی سنگھ ، ایگزیکٹیو انجینئر ایم اینڈ آر ای ۔III سنجے شرما ، ایگزیکٹیو انجینئر ٹی ایل سی ڈی ۔I جے ایس راٹھور ، ایگزیکٹیو انجینئر ٹی ایل سی ڈی ۔IIآر سی شرما، ایگزیکٹیو انجینئر ٹی ایل ایم ڈی ۔I ست پال ، ایس ای ایس اینڈ او سرکل ۔I جموں وی کے گندوترا اور انچارج ایگزیکٹیو انجینئر ایس ٹی ڈی ۔Iجموں جنک شرما بھی موجود تھے۔دریں اثنائ کے کے شرما نے ایک میٹنگ طلب کر کے محکمہ صحتِ عامہ کی کارکردگی اور جموں میں موسم گرما کے دوران پینے کے پانی کی سپلائی صورتحال کا جائزہ لیا۔میٹنگ میں چیف انجینئر صحت عامہ وِنود گپتا کے علاوہ محکمہ کے دیگر افسران بھی موجود تھے۔میٹنگ کے دوران ٹرانسفارمروں اور مشینوں کے اضافی سٹاک اور مختلف علاقوں میں موسم گرما کے دوران پانی کے اضافی ٹینکر سپلائی کرنے کے معاملے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ ٹرانسفارمروں اور مشینوں کا بینک قائم کرنے کے لئے پہلے ہی اقدامات کئے جاچکے ہیں۔مشیر موصوف نے افسروں کو ہدایت دی کہ وہ لوگوں کو درپیش مشکلات کا جائزہ لینے اور اُن کا ازالہ کرنے کے لئے متواتر بنیادوں پر فیلڈ دوروں کا اہتمام کریں۔اُنہوں نے محکمہ بجلی کے انجینئروں کو ہدایت دی کہ وہ محکمہ صحت عامہ کی تنصیبات کو بلا خلل بجلی سپلائی یقینی بنائیں تاکہ لوگوں کو سخت گرمی کے دوران پینے کے پانی کی سپلائی فراہم کی جاسکے۔اُنہوں نے اس سلسلے میں متعلقہ محکموں کو آپسی تال میل کے ساتھ کام کرنے کی ہدایت دی۔