تازہ ترین

موجودہ پُرآشوب حالات کی ذمہ دار پی ڈی پی: ڈاکٹر فاروق

بابا ریشیؒ آستان پر حاضری دی، امن اور ترقی کیلئے دعا کی

10 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیو ڈسک
سرینگر//ممبر پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ نیشنل کانفرنس ریاست کی خصوصی پوزیشن کی حفاظت کرنے اور تینوں خطوں کی یکساں ترقی کرنے والی جماعت ہے۔ڈاکٹر فاروق نے  حضرت بابا پیام الدین ریشی ( ریشی صاحبؒ) ٹنگمر گ میںآستان پر حاضری دی اور ریاست میں امن و امان اور ترقی کیلئے دعا کی۔ انہوںنے کہاکہ اولیائے کرام اور بزرگان دین نے کشمیر کے چپہ چپہ کو اسلام کے نور سے منور کیا ۔  ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ اہل کشمیر تا قیامت میر سید علی ہمدانی ؒ کے احسانات فراموش نہیں کر سکتے جن کی بدولت ہمیں اسلام کی نعمت حاصل ہوئی اور دین کے ساتھ روزگار یعنی صنعت و حرفت بھی حاصل ہوئی ۔ ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ حضرت علمدار کشمیر شیخ نور الدین نورانی ( نندریشی ) ؒ نے اپنی مادر ی زبان کشمیری میں قرآن مجید اور احادیث مبارک کی تشریح اور بیان کر کے ہم پر بڑا احسان کیا اور ان کی تعلیم ، علمی اور روحانی کمالات ہمارے لئے مشعل راہ ہے ۔ ڈاکٹر فاروق سے بہت سارے پارٹی عہدیداراں اور کار کنوں سے بھی ملاقی ہوئے اور اپنے علاقوں کے مصائب اور مشکلات سے آگاہ کیا ۔ ڈاکٹرفاروق نے انہیں یقین دہانی کی ان کے مسائل متعلقہ حکام کی نوٹس میں لاکر سد باب کرنے کی ہر کوشش کی جائے گی۔ انہوں نے کارکنوں اور لوگوں سے اپیل کی کہ وہ اپنی آبائی جماعت نیشنل کانفرنس ،جو ریاست کے لوگوں کی سیاسی ، عوامی نمائندہ جماعت رہی ہے ،کو مضبوط کرے ۔ انہوںنے کہاکہ یہی جماعت ریاست کی خصوصی پوزیشن اور تینوں خطوں کی یکساں ترقی کے ساتھ ساتھ صدیوں کے بھائی چارہ کی علم کو فروزاں رکھنے کی علمبردار جماعت رہی ہے اور ان عناصروں سے باخبر رہے جو ریاست کی شناخت ، وحدت ، انفرادیت ، کشمیریت کو کھوٹے سکوں کے بدلے فروخت کرنے کے درپے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ ماضی میں بھی ایسے عناصر نے اقتدار کی خاطر 35 اے اور دفعہ 370 کمزور کرنے کی مذموم کوششیں کیں ۔ انہوںنے آنے والے ریاستی اسمبلی الیکشن کے لئے تیار رہنے کو بھی کہا کیونکہ یہ بڑاامتحان ہے اور مجھے امید ہے کہ آپ اپنے دیانتدار ، صاف گو امیدواروں کو کامیاب بنانے میں اپنا تعاون دے کر کشمیر میں اپنے نمائندہ سرکار بنائیں گے۔ ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ قلم دوات والوں نے ہی ریاست میں آج کے حالات پیدا کئے اورمسلمان دشمن آر ایس ایس والوں کے ساتھ ساتھ اتحاد کرکے ریاست کی خصوصی پوزیشن کو کمزور کرنے میں کوئی کثر باقی نہ رکھی ۔ڈاکٹر فاروق نے کہاکہ ریاست میں افسپا لگا کرنوجوانوں کو بے دریغ قتل کیا جارہا ہے ، مکانات زمین بوس کئے جارہے ہیں ،یہ مرحوم مفتی محمدسعید کی ہی دین ہے جس نے بحیثیت مرکزی وزیر داخلہ افسپا نافذ کروایا اور فوج کو خصوصی اختیارات دئے اور اس کی بیٹی محبوبہ مفتی نے جی ایس ٹی لگا کر ریاست کے لوگوں کو مالی خود مختاری سے محروم کردیا۔ فوڈبل نافذ کر کے لاکھوں کشمیر کو راشن سے محروم کر دیا ۔