تازہ ترین

بٹہ مالو میں پانی کی قلت اور سڑکوں کی حالت ناگفتہ بہہ

آبادی میں غم و غصہ ،انتظامیہ اور متعلقہ محکموں پر غفلت برتنے کا الزام

9 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

سٹی رپورٹر
سرینگر//شہر سرینگر میں گزشتہ برسوں سے سڑکوں کی صرف لمبائی اور چوڑائی ناپی جارہی ہے اور اس حوالے سے سیاسی حلقوں کی طرف سے دل لبھانے والے باتیں سامنے لائی جارہی ہیں تاہم بعد میں ایسا کچھ نظر نہیں آتا ہے ۔شہر کے کئی علاقوں میں گزشتہ کئی برسوں سے سڑکوں کی معمولی مرمت تک نہیں کی گئی اور اسطرح سڑکوں کی تعمیر ومرمت کو بھی سیاسی کھیل بنادیا گیا ہے ۔بٹہ مالو سے ٹینکہ پورہ جانے والی سڑک کا ایک حصہ پچھلے کئی برسوں سے تجدید و مرمت کا انتظار کررہا ہے تاہم حکام کی نظروں سے اوجھل یہ سڑک نہ صرف پیدل چلنے والوں بلکہ نجی گاڑیوں میں سفر کرنے والے لوگوں کیلئے بھی پریشانی کا سبب بن گئی ہے۔لوگوں کا کہنا ہے کہ سڑکیں انتہائی خستہ ہو چْکی ہیں ،جس کے سبب سڑکوں پر گہرے کھڈے بن گئے ہیں اور تباہ حال سڑکوں کی وجہ سے عوامی حلقوں میں سخت ناراضگی پائی جارہی ہے۔بٹہ مالو سے ٹینگہ پورہ تک اہم سڑک کافی خستہ ہو چکی ہے ، سڑک پر گہرے کھڈے بن گئے ہیں۔اْن کا کہنا تھا کہ یہ سڑکیں معمولی بارشوں کے بعد ہی تالابوں کا منظر پیش کرنے لگتی ہیںجس کے نتیجے میں گاڑیوں کے ساتھ ساتھ پیدل چلنے والوں کا عبور و مرور تقریباً نا ممکن بن جاتا ہے۔مقامی آبادی کے ساتھ ساتھ مقامی تاجروں نے سرکار سے مانگ کی ہے کہ سڑکوں کی مرمت کے لئے اقدامات اٹھائے جائیں۔دریں اثناء علاقہ میں کئی ہفتوں سے پانی کی قلت بھی ہے اور لوگوں میں غم وغصہ پایا جارہا ہے ۔لوگوں کا کہنا ہے کہ اگرچہ یہ معاملہ اعلیٰ حکام اور متعلقہ محکمہ کی نوٹس میں بھی لایا گیا تاہم ابھی تک ان کے مسائل کا ازالہ نہ ہوسکا۔انہوں نے الزام لگایا کہ ضلع انتظامیہ اور پی ایچ ای محکمہ کی مبینہ بے حسی کے نتیجے میں دیارونی بٹہ مالو میں پانی کی سپلائی کا معاملہ کئی برسوں سے حل نہیں ہو پایا ہے اور اس غفلت شعاری کے سبب دیارونی زیارت بٹہ مالو کی آبادی بھی پانی کی بوند بوند کیلئے ترس رہی ہے ۔