عیدالفطرکے تیسرے دن بھی چہل پہل

مغل باغات بادام واری اور دیگر پارکوں میں لوگوں کی بھیڑ

8 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیو ڈسک
سرینگر//  عید کا تیسرا دن بھی بچوں کی تیاریوں اور ہنگاموں کے ساتھ شروع ہوا ۔کل بھی بچے عید کی خوشیاں منانے کے موڈ میں نظر آئے جہاں بیشتر بچوں نے مغل باغات اور پارکوں کا رخ کیا جس دوران شہر سرینگر کے کئی مغل باغات اور بادام واری اور دیگر چھوٹی بڑی پارکوں میں کافی چہل پہل نظر آئی۔عید الفطر کے پہلے اور دوسرے روز کے بعدکل جمعہ کو تیسرے روز بھی عید کی گہما گہمی جاری رہی۔ لوگوں کی بڑی تعداد نے پارکوں اور تفریح گاہوں کا رخ کرلیا ۔ اس دوران گھروں میں لذ یز پکوان بنانے اور دعوتوں کا سلسلہ بھی جاری رہا ۔ جمعہ کوسرکاری تعطیل نہ ہونے کے بائوجود بھی بیشتر تعلیمی اداروں اورسرکاری دفاتر و بینکوں میں معمول کی حاضری کم رہی۔ دن بھر رنگ برنگے کپڑوں میں ملبوس بچوں کے ساتھ ساتھ بڑی عمر کے لوگ بھی باغات اور پارکوں میں وقت گزارتے ہوئے دیکھے گئے۔ سب سے زیادہ بھیڑ شہرہ آفاق جھیل ڈل کے کناروں پر واقع مغل باغات نشاط اور شالیمار میں دیکھی گئی۔نشاط میں میوزک کے تڑکے پر منچلوں کے رقص نے خوب رنگ جمایا۔شالیمار میں بھی عید کی خوشیوں کا سین آن تھا۔ بلیوارڈ روڑ پر شدید ٹریفک جام دیکھا گیا جہاں لوگ جھیل ڈل اور مغل باغات کی سیر پر آئے ہوئے تھے۔ اقبال پارک میں بچہ پارٹی جھولوں سے لطف اندوز ہوئی۔ شہر خاص کے رعناواری علاقے میں واقع بادام واری میں پچھلے تین دنوں سے کافی رش رہا جہاں وادی کے مختلف علاقوں سے آنے والے بچے ناچ اور لائوڈ اسپیکروں پرپنجابی، ہندی اور کشمیر ی گانے گا کر خوشی کا اظہار کررہے تھے۔ بادام واری اور نگین میں عید منانے کیلئے آنے والے لوگوں کے رش کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ نگین سے کاٹھی دروازہ تک کا سفر کرنے کیلئے لوگوں کو کئی گھنٹوں تک انتظار کرنا پڑا۔ شہر کے قلب میں واقع پرتاب پارک میں پیر کو بھی بچوں کی ایک اچھی خاصی تعداد کو کھیلتے ہوئے دیکھا گیا۔ ایسے ہی مناظر حضوری باغ میں واقع ڈاکٹر سر محمد اقبال ؒپارک اور نزدیکی چلڈن پارک میں بھی دیکھے گئے جہاں بچوں کو جھولا جھولنے کا مزہ لیتے ہوئے دیکھا گیا۔ ان پارکوں کے باہر غیرریاستی شہری کھلونے اور آئس کریم فروخت کررہے تھے۔ وادی کے سیاحتی مقامات خاص طور پر گلمرگ، سونہ مرگ، یوسمرگ، دودھ پتھری اور اچھہ بل میں بھی لوگوں کا رش نظر آیا۔