تازہ ترین

کٹھوعہ معاملہ | کیس کی سماعت تکمیل کے قریب

3 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
جموں//کٹھوعہ میں ایک آٹھ سالہ بچی کی عصمت دری اور قتل معاملے کی سماعت پٹھانکوٹ کی ایک عدالت میں تکمیل کوپہنچنے کے قریب ہے۔حکام کے مطابق آج یعنی سوموار کو وکیل دفاع اپنے دلائل مکمل کرے گااور اس کے بعد استغاثہ کی ٹیم جے کے چوپڑہ کی قیادت میں اپنا مختصراختتامی بیان دیں گے ۔حکام کے مطابق اس کے بعد اس کیس پر فیصلہ آنے کی توقع ہے ۔اس معاملے کی سماعت گزشتہ برس جون میں روزانہ بنیادوں پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پٹھانکوٹ پنجاب میں شروع ہوئی جب سپریم کورٹ نے اس معاملے کو جموں کشمیر سے منتقل کرنے کی ہدایت دی جب کٹھوعہ کے وکلاء نے کرائم برانچ کو اس معاملے میں چارج شیٹ داخل کرنے سے روکا۔ جموں میں گزشتہ برس جنوری میں ا س وقت ایک سیاسی ہنگامہ برپا ہواجب جموں کشمیر پولیس کے کرائم برانچ نے اس کیس کواپنے ہاتھ میں لیکر آٹھ لوگوں کو حراست میں لیاجن میں ایک کم عمر اور دو پولیس اہلکار بھی شامل ہیں جن پر الزام تھا کہ انہوں نے ثبوتوں کو تباہ کیا ۔ یہ معاملہ بی جے پی اور پی ی پی کی مخلوط سرکار کے درمیان باعث تنازعہ بنا جب بی جے پی کو گرفتار کیلئے افراد کے حق میں ہندو ایکتا منچ کی احتجاجی ریلی میں شرکت کرنے کیلئے اپنے دووزراء لال سنگھ اور چندرپرکاش گنگا کو برخاست کرنا پڑا۔قابل ذکر ہے کہ اس معاملے میں کم عمر ملزم کی سماعت ہونا ابھی باقی ہے کیونکہ اس کی عمر ے متعلق عرضی کی سماعت ریاستی ہائی کورٹ میں ہورہی ہے۔