کپوارہ ضلع کے سرکاری سکولو ں میں زیر تعلیم طلبہ وردی سے محروم

2 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

اشرف چراغ
کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ کے سرکاری سکولو ں میں زیر تعلیم طلبہ ہنوز وردی سے محروم ہیں جس پر والدین میں محکمہ کے تئیں سخت ناراضگی پائی جارہی ہے ۔ریاست کے سرکاری سکولو ں میں اگرچہ طلبہ کو مفت وردی اور کتابیںفراہم کی جاتی ہیں لیکن امسال تعلیمی سال کے 5مہینے گزرنے کے باجود بھی آج تک طلبہ میں مفت وردیاں اور کتابیں فراہم نہیں کی گئیں ۔کپوارہ ضلع کے اکثر و بیشتر علاقوں سے والدین نے شکایت کی ہے کہ سرکار کی طرف سے طلبہ کو تعلیمی سال شروع ہوتے ہی سکول انتظامیہ دو عدد وردیاں فی طالب علم فراہم کی جاتی ہیں اور وقت مقررہ پر طلبہ وردی پوش ہو کر اسکول جاتے ہیں لیکن اس سال وردی کا ٹھیکہ کسی ایسی ایجنسی کو دیا گیا ہے جو 5مہینے گزرنے کے با وجود بھی سرکاری سکولو ں میں زیر تعلیم طلبہ کو وردیاںفراہم کرنے میں ناکام ہو چکی ہے جس سے محکمہ تعلیم کے اعلیٰ حکام کے دعوے سراب ثابت ہورہے ہیں ۔ان سکولو ں میں زیر تعلیم طلبہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یاکہ تدریسی کتابو ں کی بھی کمی ہے ۔اس دوران ٹیچرس فورم کے ضلع صدر کپوارہ محمد امین خان نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ سرکار کی جانب سے طلبہ کو مفت وردیاں فراہم نہ کرنے پر والدین میں شدید ناراضگی پائی جارہی ہے اور انہو ں نے اب ان سر کاری سکولو ں میں تدریسی عملہ کو گھیر لیا۔انہو ں نے کہا کہ والدین اپنے بچو ں کے تعلیمی مستقبل کو لیکر اساتذہ پر بھروسہ کرتے ہیں لیکن ارباب اقتدار چار سو کی وردی فراہم کرنے میں ناکا م ہے ۔
 

تازہ ترین