تازہ ترین

لو پیڈ ایمپلائز فیڈریشن کی بھاری ریلی

گورنر انتظامیہ سے مطالبات منظور کرنے کا مطالبہ کیا

30 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

 جموں //آل جے اینڈ کے لو پیڈ ایمپلائز فیڈریشن کی کال پر فیڈریشن کے صوبائی صدر جگدیش راج شرما کی قیادت میں یہاں پیر کے روز ایک بھاری ریلی کا ااہتمام کیا گیا ، جس میں پونچھ، سرنکوٹ، درہال، بدھل،راجوری، نوشہرہ، سندر بنی، کالاکوٹ، آر ایس پورہ ،سانبہ، بشناہ، کٹھوعہ، بلاور، بسوہلی ، ہیرا نگر، گھگوال ،ریاسی، اودہمپور، چنہنی، رام نگر، رام بن ، بانہال، کشتواڑ، بھدرواہ، ڈوڈہ ،جموں شہر اور گرد و نواح کے ملازمین ، پنشنروں ،یومیہ اجرتوں پر کام کرنے والے ورکروں و دیگران نے ریلی میں شرکت کی۔ملازمین پریڈ گرائونڈ میں اکٹھا ہوئے اور ایک بھاری ریلی نکالی جو پرانی منڈی، سٹی چوک، رگھو ناتھ بازار، ریذیڈنسی روڈ، سے ہوتے ہوئے شہیدی چوک میں اختتام پذیر ہوئی۔ اس موقعہ پر نامور ٹریڈ یونین لیڈر و فیڈریشن کے صدر عبدالمجید خان نے مئی ڈے کے شہیدوں کو زبر دست خراج عقیدت ادا کیا ،جنھوں نے دنیا بھر میں ہفتہ کے بعد چھٹی او رکام کرنے کے لئے مقررہ اوقات کیلئے اپنی جان کی قربانی دی۔انہوں نے کہا کہ وقت کی مرکزی و ریاستی سرکار کی عوام مخالف او ر ورکر مخالف پالسیوں سے اشیا ئے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے اور کام کرنے کے حالات بہت ہی غیر محفوظ بنائے گئے ہیں ،جس کی وجہ سے ورکنگ کلاس اور محنت کش طبقہ کے مشکلات میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔فیڈریشن کے جنرل سیکرٹری اوم پرکاش شرما ،جے اینڈ کے سٹیٹ پنشنرس ایسو سی ایشن کے صدر کرشن سنگھ ،صوبائی ٹیچرس ایسو سی ایشن کے سرکردہ کارکن انیل ورما بھی مقررین میں شامل تھے۔مقررین نے گورنر انتظامیہ سے مرکز کے طرز پر ملازموں اور پنشنروں کے حق میںمیڈیکل الائونس میں اضافہ کر کے اسے ایک ہزار روپے کرنے ، قابل برداشت پریمیم کا ہیلتھ انشورنس فراہم کرنے ، جے اینڈ کے ریاست میں ایل ٹی سی کو بحال کرنے، یومیہ اجرتوں پر کام کرنے والوں کی کم سے کم روزانہ اجرت400روپے کرنے،چوکیداروں کی خدمات بطور درجہ چہارم ملازم کے باقاعدہ بنانے، لمبرداروں ،آنگن واڑی ورکروں ہیلپروں ، آر ای ٹی اساتذہ، و دیگر ان کے مشاہروں میں اضافہ کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔7ویں تنخواہ کمیشن کے بقایا جات مرکزی سرکا رکے ملازموں کے طرز پر یکمشت ادا کرنے ،دریں اثنا تنخواہ بقایاجات کی دوسری قسط فوری طور واگُذار کرنے ،تنخواہوں میں تفاوت کو پرانی تاریخ سے لاگو کرنے ،سپورٹس کونسل ملازمین کے حق میں پنشنری فوائد ادا کرنے ،فائنل جی پی فنڈ کی ادائیگی کے لئے سرکار کے حکم نمبر 49-F of 2018کے تحت فقط پانچ سال کے جی پی فنڈ ادائیگی اور ڈیپازٹ کے سٹیٹمنٹ پر سختی سے عمل کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا۔مقررین نے دیگر محکموں کے باقی ماندہ مطالبات کو بھی منظور کرنے کا مطالبہ کیا۔