تازہ ترین

بیشترپولنگ عملہ رات بھر بھوکا پیاسا رہا

کہیں بستر کا انتظام نہیں تو کہیں ٹرانسپورٹ کی عدم دستیابی رہی

19 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(   عکاسی: مبشرخان    )

بلال فرقانی
سرینگر// سرینگر پارلیمانی انتخابات کیلئے تعینات انتخابی عملے نے سرکار کی طرف سے سہولیات کی عدم دستیابی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ دوران شب کہیںبستر نہیں تو کہیں فاقہ کشی میں ہی رات گزارنا پڑی۔پولنگ عملہ نے انتظامیہ کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ انہیں حالات کے رحم وکرم پر چھوڑ ا گیا تھا۔ کرالہ پورہ پولنگ مراکز میں تعینات ملازمین نے اپنی روئیداد بیان کرتے ہوئے کہا کہ اگر چہ انہوں نے ماضی میں بھی پولنگ ڈیوٹی دی ہے،تاہم آج جن مشکلات کا سامنا انہیں کرنا پڑا،وہ نا قابل بیان ہے۔ انہوںنے کہا” ڈگری کالج چرار شریف میں بدھ صبح10 بجے پولنگ کا مواد دیا گیا،جس کے بعد رات12بجے تک انتظار کرایا گیا،اور12بجے گاڑی دی گئی،جسکے بعد قریب رات ڈیڑھ بجے وہ پولنگ مرکز پر پہنچے“۔محکمہ تعلیم،ایس ایف سی اور پی ایچ کے ان ملازمین نے بتایا کہ پولنگ مراکز پر بستر کا انتظام بھی نہیں تھا،اور رات بھر انہیں فاقہ کشی کرنی پڑی“۔ انکا کہنا تھا کہ صبح ہوٹل سے انہوں نے چائے خریدی۔ اسی طرح کی شکایت ہائر اسکینڈری اسکول واتھورہ میں قائم پولنگ مراکز میں تعینات ملازمین نے بھی کی۔انہوں نے کہا کہ مختلف ایجنسیوں میں تال میل کا فقدان تھا،جس کے نتیجے میں پولنگ عملے کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ انہوں نے کہا”گزشتہ انتخابات کے برعکس اگر چہ مجموعی طور پر صورتحال بہتر تھی،تاہم اس کے باوجود انتظامیہ نے انکو سرراہ چھوڑ دیا“۔انہوں نے کہا کہ رات10بجے تک گاڑیوں کا انتظام نہیں کیا گیا تھا،جبکہ بدھ صبح10بجے ہی انہوں نے انتخابی مواد حاصل کیا تھا۔ان کا کہنا تھا کہ رات کیلئے پولنگ مراکز پر کوئی بھی انتظام نہیں تھا۔بڈگام کے رورل ڈیولپمنٹ محکمہ میں قائم پولنگ بوتھ میں تعینات پولنگ عملے کی روئیداد بھی اس سے مختلف نہیں تھی۔ان کا کہنا تھا کہ جہاں انہیں کھانے پینے کے لالے پڑ گئے وہیںبستر اور دیگر سہولیات کا انتظام بھی پولنگ مرکز پر نہیں تھا۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کے تجربے سے پہلی مرتبہ وہ وقف ہوگئے ہیں۔ بڈگام ہی نہیں بلکہ بیروہ میں بھی اسی طرح کی صورتحال سے انتخابی عملے کو گزرنا پڑا۔ گنڈی پورہ بیروہ کے پولنگ مرکز میں تعینات عملے کا کہنا تھا کہ مقامی لوگوں نے ان کیلئے بستر اور کھانے پینے کا انتظام کیا۔پولنگ افسر نے بتایا” انتظامیہ کی طرف سے کسی بھی طرح کا انتظام نہیں تھا،تاہم مقامی لوگوں نے جس طرح پولنگ عملے کا خیال رکھا،اس مہمان نوازی کو فراموش نہیں کرسکتے“۔بیشتر پولنگ مراکز میں تعینات عملہ سہولیات کی عدم دستیابی کا رونا رو رہے تھے۔کئی پولنگ مراکز پر ملازمین کو فاقہ دیکھ کر سیکورٹی فورسز نے انکے لئے کھانے کا انتظام کیا۔