تازہ ترین

پارلیمانی انتخابات کے بعدہند پاک مذاکرات کیلئے پُر اُمید:پاک سفیر

15 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
 نئی دہلی//پاکستان پراُمید ہے کہ بھارت میں پارلیمانی انتخابات کے بعد پھر مذاکرات بحال ہوں گے اور دونوں ممالک بات چیت کے ذریعے آپسی معاملات اور تصفیہ طلب مسائل کاحل ڈھونڈ نکالنے میں کامیاب ہوں گے تاکہ خطے میں پائیدارامن اور سلامتی کی فضاقائم ہوسکے۔ ایک انٹرویو میں نئی دہلی میں پاکستان کے سبکدوش ہورہے ہائی کمشنر سہیل محمود نے کہا کہ دو ہمسایہ ممالک کے درمیان تعلقات کو بہتر بنانے کیلئے سفارتکاری اور مذاکرات ناگزیر ہیں۔انہوں نے کہا’’ ہمیں بھارت میں پارلیمانی انتخابات کے بعد مذاکرات کے پھر سے شروع  ہونے کی اُمیدہے۔سفارتکاری اور مذاکارت ناگزیر ہیں۔‘‘ محمود جنہیں پاکستان کا نیا خارجہ سیکریٹری مقررکیاگیا ہے،نے کہا کہ خطے میں پائیدار امن اور سلامتی قائم کرنے کیلئے بھارت اور پاکستان کے درمیان مذاکرات کے سواکوئی متبادل نہیں ہے تاکہ باہمی مسائل کوسمجھا جائے۔ انہوں نے کہا کہ مسلسل مذاکرات سے دونوں ملک آپسی مسائل اوراختلافات کو سمجھ کر تصفیہ طلب مسائل کاحل نکال پائیں گے جس سے خطے میں خوشحالی ،پائیدارامن اورسلامتی کی فضا قائم ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ بھارت میں پاکستان سے متعلق بیانیہ کاجائزہ لینے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایسا بیانیہ جس میں پاکستان کی حقیقت مثبت طور اور مکمل بیان کی گئی ہو۔ایک ایسا بیانیہ جوپرامن ،اشتراک اوراچھے ہمسائیگی تعلقات کوتسلیم کرتا ہو۔ انہوں نے مزیدکہا کہ ہمیں خطے اور اپنے لئے پائیدارامن ،برابر تحفظ اور سلامتی کیلئے جدوجہد کرنا ہوگی۔کرتار پور راہداری کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں سہیل محمود نے کہا کہ اسلام آباد اپنے طرف سے اس ڈھانچے کو مکمل کرنے میں پرعزم ہے  ۔