تازہ ترین

بیساکھی کے موقعہ پرقدیمی ناگنی مندر میںہزاروں کا اجتماع

عقیدتمندوںنے بھدرواہ ڈیولپمنٹ اتھارٹی اور محکمہ سیاحت کو تنقید کا نشانہ بنایا

15 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

طاہر ندیم خان
 بھدرواہ //سبر ناگ مندر میں پندرہ ہزار کے اجتماع کے دوسرے روز قدیمی ناگنی ماتا مندر میں بھی 9ہزارکے قریب عقیدت مند جمع ہوئے۔یہ اجتماع بیساکھی کے موقعہ پر ہوئے ۔ اس دوران عقیدت مندوںنے محکمہ سیاحت اور بھدرواہ ڈیولپمنٹ اتھارٹی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ ان مذہبی مقامات والی جگہوں کو نظرانداز کردیاگیاہے اور ان کی ترقی کیلئے اقدامات نہیں کئے جارہے ۔ناگنی بھدرواہ سے آٹھ کلو میٹر دور گھنے جنگلات میں واقع ہے جہاں ہر سال ہزاروں کی تعداد میں لوگ بیساکھی کے موقعہ پر جمع ہوتے ہیں اور یہاں قائم 800سالہ قدیم مندر پر حاضری دیتے ہیں ۔ حکومت کی طرف سے بھدرواہ میں سیاحت کے فروغ کیلئے بھدرواہ ڈیولپمنٹ اتھارٹی قائم کی گئی ہے لیکن ابھی کچھ زیادہ اقدامات نہیں کئے گئے ہیں ۔ایک عقیدتمند منوج کوتوال نے کہاکہ یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ بھدرواہ ڈیولپمنٹ اتھارٹی اور محکمہ سیاحت بھدرواہ میں سیاحتی شعبے کو ترقی دینے میں ناکام ثابت ہوئے ہیں اور مذہبی سیاحت بھی فروغ نہیں پاسکی باوجود اس کہ بارہا اس سلسلے میں گزارشات کی گئیں ۔ایک اور عقیدتمند گھنشام نے بتایاکہ اس جگہ پہنچ کر انہیں سکون ملتاہے لیکن اسے ترقی دینے کی ضرورت ہے ۔انہوںنے کہاکہ وہ اس مقام پر ہر سال آتے ہیں اور اس کے خاندان کویہاں سے محبت ہے تاہم وہ یہ سمجھنے سے قاصر ہیں کہ کیوں حکام نے ایسی جگہوں کو نظرانداز کررکھاہے ۔انہوںنے کہاکہ یہ جگہیں بھی ماتاویشنو دیوی اور دیگر جگہوںکی طرح کافی مشہور ہوسکتی ہیں ۔ناگنی ماتا سنگ کمیٹی کے ایگزیکٹو ممبر دننتر سنگھ نے بتایاکہ بھدرواہ ڈیولپمنٹ اتھارٹی کی میٹنگ کے دوران سی ای او نے ان تہواروں کے دوران کام کرنے میں دلچسپی دکھائی تھی لیکن یہ سب سراب ثابت ہواہے ۔