تازہ ترین

گریٹر کشمیر اور کشمیر ریڈر اشتہارات پر قدغن ، پریس کونسل آف انڈیا متفکر

حکومت کے نام وجہ بتاؤ نوٹس جاری

15 مارچ 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر//پریس کونسل آف انڈیا(پی سی آئی ) نے وادی کشمیر سے شائع ہونے والے انگیریزی روزنامہ گریٹر کشمیر اور کشمیر ریڈپر سرکاری اشتہارت پر بلا وجہ پابندی عائد کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی انفارمیشن کمشنراور ریاستی سرکار کے نام وجہ بتاو نوٹس جاری کرتے ہوئے کاروائی کو پرس کی آزادی کو محدود کرنے کے مترادف قرار دیا ۔پریس کونسل آف انڈیا (پی سی آئی) نے جمعرات کو جموں کشمیر سرکار اورمرکزی انفارمیشن کمشنرکے نام وجہ بتاو نوٹس جاری کرتے ہوئے انگریزی روزنامہ گریٹر کشمیر اور کشمیر ریڈر پر سرکاری اشہارات کی پابندی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔اس دوران جاری ایک کے مطابق’’پی سی آئی ‘‘نے کشمیر ایڈیٹرس گلڈ کی شکایت اور صحافیوں،اخبارت کے احتجاج کے بعد گریٹر کشمیر اور کشمیر ریڈر کو وجہ بتائے بغیر سرکاری اشتہارات پر پابندی کا نوٹس لیا ۔بیان کے مطابق اْنہوں نے جموں کشمیر سرکار اور ریاستی انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ کے نام نوٹس بھی جاری کردی ہیپرس کونسل نے بتایا ایسے واقعات پریس کی آزادی محدود کرنے کے مترادف ہے۔خیال رہے فروری2019 میں ریاستی گورنر ستیہ پال ملک کی انتظامیہ نے دو انگریز ی اخبارات کے سرکاری اشتہارات معطل کردیئے ور اس کیلئے کوئی وجہ ظاہر نہیں کی گ ہء جس کے خلاف کشمیر سے شائع ہونے والے اکثر انگریزی اور اْردو روزناموں نے گذشتہ اتوار کو اپنے پہلے صفحے پربطور احتجاج کوکورے رکھ کوئی بھی خبر شائع نہیں کی تھی۔