تازہ ترین

منشی محلہ کاوڈارہ میں نیا ٹرانسفارمر نصب کرنے کامقصد فوت

اوور لوڈ ہونے سے پُرانا ٹرانسفارمر باربار خراب، صوبائی کمشنر اور چیف انجینئر سے مداخلت کی اپیل

18 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

بلال فرقانی
سرینگر// منشی محلہ کائوڈارہ کے لوگوں نے محکمہ بجلی پر اقرباء پروری کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ علاقے میں منظور نظر افراد کو فائدہ پہنچانے کیلئے نئے بجلی ٹرانسفارمر سے مخصوص لوگوں کو بجلی فراہم کی جاتی ہے۔مقامی لوگوں کے ایک وفد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ علاقہ منشی محلہ بدھگیر کاوڈارہ میں پہلے سے400کلو واٹ کا ایک ٹرانسفارمر نصب کیا گیاجو اہل علاقہ کی ضروریات کے مطابق ناکافی تھا۔وفدنے کہا کہ علاقے کے لوگوں کی جدوجہد کے بعد متعلقہ ممبر اسمبلی نے فنڈ واگزار کیااور220کلو واٹ کا نیا ٹرانسفامر نصب کیا گیا۔ وفد نے کہا کہ اگرچہ حکام نے یہ ٹرانسفامر پورے علاقے کو سہولیات کیلئے دیا تھا تاکہ پرانے ٹرانسفارمر پر سے لوڑ کو کم کیا جائے تاہم حیران کن طریقے پرنئے بجلی ٹرانسفامر سے ایک روٹری پریس کے علاوہ صرف17 کنبوں کو کنکشن دئیے گئے ہیں۔وفد نے کہا کہ نئے ٹرانسفارمر کے متصل مزید15کنبوں کو پرانے ٹرانسفارمر سے ہی بجلی فراہم کی جاتی ہے اور چونکہ اس پر پہلے ہی کافی لوڑ ہے،اس لئے پرانا ٹرانسفارمربار بار خراب ہوتا ہے۔وفد نے کہا کہ نئے ٹرانسفارمر کو نصب کرنے کا مقصد لوڑ تقسیم کرنا تھا تاہم محکمہ کے عملے نے تمام قواعد کو بالائے طاق رکھ کر علاقے میں عجیب کیفیت پیدا کی ہے۔ وفد نے کہا کہ اگر چہ اس سلسلے میں متعلقہ ایگزیکٹو انجینئر کے علاوہ چیف انجینئر اور صوبائی کمشنر کشمیر کی نوٹس میں بھی یہ بات لائی گئی اور انہوں نے یقین دہانی بھی کرائی تاہم زمینی سطح پر کوئی بھی کارروائی نہیں کی گئی ۔لوگوں نے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر ٹرانسفارمروں کا لوڑتقسیم کیا جائے تاکہ پرانا ٹرانسفارمر بھی محفوظ رہے اور نئے ٹرانسفارمر سے بھی لوگوں کو بجلی مہیا ہوسکے۔