۔’60سال کی عمرکے ورکروں کو3ہزارروپے ماہانہ ملیں گے‘

سوربھ بھگت نے پی ایم ۔ ایس وائی ایم پنشن سکیم کی عمل آوری کاجائزہ لیا

13 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

جموں/ کمشنر سیکرٹر ی محنت و روزگار سوربھ بھگت نے یہاں ایک میٹنگ کے دوران ریاست میں پردھان منتری شر￿م۔ یوگی مان دھان ( پی ایم ۔ ایس وائی ایم ) پنشن سکیم کو جاری کرنے سے متعلق تیاریوں کا جائزہ لیا۔میٹنگ میں ڈائریکٹر ایمپلائمنٹ یشپال سُمن ، لیبر کمشنر بشیر احمد خان، جوائنٹ ڈائریکٹر ایمپلائمنٹ جموں انوبھیل ،ڈپٹی ڈائریکٹر ایمپلائمنٹ شاہد محمود اور دیگرمتعلقہ افسران موجود تھے۔کمشنر سیکرٹری نے سکیم کی عمل آوری کے لئے مقررہ ایجنسیوں کو ہدایت کو ہدایت دی کہ وہ اس سکیم وقت پر جاری کرنے کی تمام تیاریاں مکمل کریں ۔اس سلسلے میں اُنہوں نے ایک کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت دی جس کے ممبران محکمہ سے اور عمل آور ایجنسی سے تعلق رکھتے ہوں۔پنشن سکیم کا مقصد غیر منظم سیکٹر میں کام کرنے والے ورکروں کو ماہانہ 15000روپے تک آمدنی فراہم کرنے کا نشانہ مقرر کرنا ہے ۔تمام غیر منظم جن کی عمر 18سے 40سال کے درمیان ہوں ، اس سکیم سے مستفید ہوسکتے ہیں۔سکیم کے تحت 60سال کی عمر کو پہنچنے والے ورکر کو ماہانہ معمولی رقم جمع کرنے پر ماہانہ تین ہزار روپے دئیے جائیں گے ۔غیر منظم سیکٹر سے تعلق رکھنے والے ورکروں میں گھروں میںکام کرنے والے ،چھاپڑی فروش ، مڈ ڈے میل ورکر ، ہیڈ لوڈر ،برک کلن ورکر، موچی،ریگ پِکر ،دھوبی ،رکشا پُلر، لینڈ لیس لیبرر ، ایگریکلچر ل ورکر،کنسٹرکشن ورکر ، بی ڈی ورکر ، ہینڈ لوم ورکر ، لیدر ورکر ، آڈیو ویژول ورکر و دیگر پیشوں سے تعلق رکھنے والے لوگ اس سکیم سے مستفید ہوسکتے ہیں۔ریاست میں سکیم کا آغاز 15 ؍ فروری 2019ء کو کیا جائے گا۔بعد میں کمشنر سیکرٹری نے محکمہ محنت کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے ایک علاحدہ میٹنگ کی صدارت کی۔لیبر کمشنر نے اس موقعہ پر کہا کہ محکمہ ورکروں کی حالت بہتر بنانے کے لئے مختلف لیبر قوانین کا نفاذ یقینی بنانے کے لئے اقدامات کر رہا ہے۔اُنہوں نے مزید کہا کہ سٹیٹ لیبر ایکٹ ریاست کے لیبر کلاس کے مفاد کے تحفظ کے لئے عملایا جارہا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ اب تک مختلف لیبر ایکٹوں کے تحت 263.848لاکھ روپے کا ریوینو وصول کیا گیا ہے۔اسی طرح شاپس اینڈ اسٹیبلشمنٹ ایکٹ کے تحت اب تک 222.64لاکھ روپے کا ریوینو وصول کیا گیا ہے ۔میٹنگ میں ڈپٹی لیبر کمشنر جموں شہناز اختر ، ڈائریکٹر فائنانس لیبر ڈیپارٹمنٹ کے علاوہ مختلف اضلاع کے اے  ایل سیز نے شرکت کی۔
 

تازہ ترین