تازہ ترین

اوڑی کے متعدد دیہات ہنوز منقطع

10 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

ظفر اقبال
اوڑی// سرحدی قصبہ اوڑی میں حالیہ بھاری برفباری کے نتیجے میں متعد دیہات کی ربطہ سڑکیں تیسرے روز سے بند ہیں جس کی وجہ سے اِن علاقوں کے رہنے والے لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ان علاقوں میں باڑین، بونیار میدانن، گگڑہل، جبڈی، کورالی، چوٹالی، سمالی، برنیٹ، دْدرن،ماچھی پتھرہکلس،مایاں ،ناگاڈائی،براری پورہ،مْکام پیرنیاں،ہتھلنگا، موٹھل، صورہ، بلکوٹ، سلیکوٹ، چرنڈہ، بٹگرں،گوہالن شامل ہیں۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ رابطہ سڑکیں بند ہونے کی وجہ سے مریضوں کو اسپتال لے جانے میں انہیں طرح طرح کے مسائل درپیش ہیں۔کئی دیہات میں غذائی اجناس کی قلت کی شکایات موصول ہو رہی ہیں۔چوٹالی سے ایک شہری نے بتایا کہ اْنہیں راشن کی قلت ہے اور اْن کے علاقے کے لوگ پیدل میدانن راشن گھاٹ پر راشن لینے کے لئے پہنچے مگر گھاٹ منشی موجود نہیں تھا اور انہیں خالی ہاتھ گھر واپس لوٹنا پڑا۔اوڑی اور بونیار کے دیگردیہات سے شکایات مل رہی ہیں کہ اْن کے علاقے میں تیسرے روز بھی بجلی غائب ہے۔منزگام، مقام، زہن پورہ، کھچاداری، چک، نوشہرہ، پرنگل، بمیار،پیرنیاں، لمبر، پہلی پورہ، اِجارہ، ہتھلنگا، صورہ، موٹھل، چرنڈہ اور بٹگراں دیہات کے لوگوں کا کہنا ہے کہ انہیں بجلی کی عدم دستیابی کے نتیجے میں سخت مشکلات درپیش ہیں۔ادھر بونیار کے دْدرن، چوٹالی، میدانن، برنیٹ اور بنہالی میں قریب چھ سے دس فٹ کی برف جمع ہے اور علاقے میں برفانی تودوں کا خدشہ لاحق ہے۔ایس ڈی ایم اوڑی بصیرالحق چودھری نے بتایا کہ وہ ازخود بنہالی بونیار جائزہ کے لئے پہنچے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ وہ سب سے پہلے بنہالی گائوں کی رابطہ سڑک کو بحال کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔