تازہ ترین

ابتر موسمی صورتحال کا تقاضا، این ایچ ایم ملازمین کا کچھ ساتھیوں کو عارضی طور پر ہڑتال سے مستثنیٰ رکھنے کا فیصلہ

10 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

بلال فرقانی
سرینگر//ابتر موسمی صورتحال کے پیش نظر ملازم، تاجرو طبی تنظیموں اور سیول سوسائٹی کی طرف سے ایمرجنسی خدمات انجام دینے کی اپیل کو مد نظر رکھتے ہوئے کئی ہفتوں سے اپنے مطالبات کے حق میں نیشنل ہیلتھ مشن کے ہڑتالی ملازمین نے کچھ ملازمین کو عارضی طور پر ہڑتال سے مستثنیٰ رکھنے کا فیصلہ لیا۔مرکزی صحت اسکیم این ایچ ایم کے تحت کام کرنے والے ملازمین بشمول طبی ونیم طبی عملہ گزشتہ کئی ہفتوں سے اپنے مطالبات کے حق میں ہڑتال پر ہیں۔اس دوران اس مرکزی اسکیم کے تحت تعینات ملازمین کی انجمن’’آل جموں کشمیر نیشنل ہیلتھ مشن ایمپلائز ایسو سی ایشن‘‘ نے ایمرجنسی خدمات کو پورا کرنے کیلئے کچھ ملازمین کو عارضی طور پر ہڑتال سے مستثنیٰ رکھنے کا فیصلہ لیا۔ایسو سی ایشن کے کشمیر صدر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ایمپلائز جوائنٹ ایکشن کمیٹی،کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز،کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینو فیکچرس فیڈریشن،سیول سوسائٹی اور ڈاکٹرس ایسو سی ایشن نے این ایچ ایم ملازمین کو ابتر موسمی صورتحال اور دیگرحالات کو مد نظر رکھتے ہوئے ایمرجنسی خدمات بحال کرنے کی اپیل کی جبکہ انہوں نے این ایچ ایم ملازمین کے مطالبات کی حصولیابی میں مکمل تعاون پیشکش کی۔انہوں نے کہا’’ ایمرجنسی خدمات انجام دینے کیلئے صوبہ کشمیر کے ایڈمنسٹریٹروں اور چیف میڈیکل افسران کی طرف سے مخصوص تحریری درخواستوں و اطلاعات پر کچھ ملازمین کو عارضی طور پر ہڑتال سے مستثنیٰ رکھنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔تاہم اس دوران مطالبات کی حصولیابی کیلئے احتجاج جاری رہے گی۔‘‘این ایچ ایم ملازمین مستقلی پالیسی کو مرتب کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے سپریم کورٹ کی طرف سے ایس آر ائو 384 کی بنیاد پر یکساں تنخواہوں کے علاوہ7 ویں تنخواہ کمیشن کے تحت فرعات فراہم کرنیکے حق میں برسر احتجاج ہیں۔