آوارہ کتوں کی آبادی میں بے تحاشااضافہ

لوگوں کا گھروں سے نکلنا مُحال، متعلقہ محکمہ محوِ نیند

13 جنوری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

سرینگر//شہر سرینگر میں کتوں کی آبادی میں بے پناہ اضافہ عوام کیلئے دردِ سر اور مصیبت بن گئی ہے۔ آوارہ کتوں کے حملوںسے شہریوں میں خوف وہراس کی لہر پائی جارہی ہے۔ شہر میں آوارہ کتوں کی بڑھتی تعداد سے لوگوں خاص کر بچوں اور خواتین کا گھروں سے باہر نکلنا مشکل ہوگیا ہے۔ آوارہ کتوں کے غولوں کے غول گلی، کوچوں، نکڑ اور چوراہوں پر دھندناتے پھر رہے ہیں جس کے سبب راہگیروں میں ڈر پایاجارہاہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ آوارہ کتوں کی آباد ی میں بے تحاشا اضافہ سے عوام گوناگوں مسائل سے دوچار ہیں۔لوگوں کاکہنا ہے کہ آئے روز کتوں کے حملوں میںشہریوں کے زخمی ہونے کی خبریں اب جیسے معمول بن گئی ہیں اور ایسا کوئی دن نہیں ہوتا جب کتوں کی جارحیت سے کوئی شہری زخمی نہیں ہوتا۔ لوگوںکاکہنا ہے کہ کتوں کی وجہ سے گھر کے کسی بڑے فرد کو ضروری کام چھوڑ کر بچوں کو ٹیوشن پر بھیجا جاتا ہے اور واپسی کیلئے بھی کسی نہ کسی فرد کو جانا پڑتاہے۔ عوامی حلقوں نے الزام عائد کیا کہ کتوں کی آبادی کو قابو میں رکھنے کیلئے متعلقہ محکمہ ہاتھ پر ہاتھ دھرا بیٹھا ہے اور انتہائی اہمیت کے اس حساس مسئلہ کو حل کرنے میں ناکام ہے۔ عوامی حلقوں کاکہنا ہے کہ کتوںکی آبادی پر قابو پانے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کئے جائیں تاکہ شہری بلاک کسی خوف و خطر کے گھروں سے باہر نکل سکے۔ 

تازہ ترین