تازہ ترین

حکومت ملے تو 'سچ اور مصالحتی کمیشن' کے ذریعے ہلاکتوں کی تحقیقات کرائیں گے: فاروق عبد اللہ

12 جنوری 2019 (59 : 03 PM)   
(      )

عظمیِ نیوز ڈیسک

سرینگر/نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبد اللہ نے سنیچر کو کہا کہ اگر اُن کی پارٹی کو آنے والے اسمبلی انتخابات میں کامیابی ملی تو وہ ہلاکتوں کی تحقیقات کیلئے ''سچ اور مصالحتی کمیشن'' کا قیام عمل میں لائیں گے۔

جنوبی کشمیر کے اننت ناگ میں ایک پارٹی تقریب کے حاشیوں پر نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرتے ہوئے فاروق عبد اللہ نے کہا کہ اُن کے بیٹا اور پارٹی کے نائب صدر، عمر عبد اللہ نے پہلے ہی 'سچ اور مصالحتی کمیشن' کی بات کی ہے۔

فاروق نے کہا''اللہ کرے کہ ہماری پارٹی کو اکثریت حاصل ہو اورہمیں کسی سہارے کی ضرورت نہ پڑے۔ ہم حکومت سنبھالنے کے پہلے ہی دن ہلاکتوں کی تحقیقات کیلئے 'سچ اور مصالحتی کمیشن' کا اعلان کرکے سچائی کو صرف جموں کشمیر کے لوگوں کے نہیں، بلکہ ساری دنیا کے سامنے لائیں گے''۔

فاروق عبد اللہ کشمیر کے اندر 2016میں ہوئی ہلاکتوں کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کا جواب دے رہے تھے۔

فوج کے ''آپریشن آل آئوٹ'' کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں فاروق نے کہا'' ہم کیسے اس کی حمایت کرسکتے ہیں؟ ہم نہیں چاہتے کہ ہمارے لوگوں کو اُن کے گھروں کے اندر مارا جائے اور وہ طرح طرح سے ظلم کا شکار ہوں۔ایسی نیشنل کانفرنس کی پالیسی کبھی نہیں رہی ہے''۔

انہوں نے کہا کہ نیشنل کانفرنس کسی بھی قسم کے تشدد یا انسانی حقوق کی پامالی کی حمایت نہیں کرسکتی ہے ۔

فاروق نے کہا''ہر ایک شہری آزاد ہے، ہم ایک آزاد ملک کا حصہ ہیں، اس لئے ہماری حکومت اظہار خیال کی آزادی کا پورا خیال رکھے گی''۔