انصاف کی فراہمی میں تاخیرناقابل قبول

پنچایت پنجگرائیں میں ہوئی چناوی دھاندلیوں کی جانچ اورعوام کیساتھ انصاف کیاجائے:مقررین

17 دسمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نیو ڈسک
جموں//پنچایتی انتخابات کاسلسلہ بھلے ہی خوش اسلوبی سے اختتام پذیرہواہوگالیکن صوبہ جموں خاص طورپرضلع جموں میں چناوی دھاندلیوں کے الزامات کاسلسلہ تھمنے والانہیں اور ناانصافی کاشکار ہوئے اُمیدوار احتجاجی مہ چھیڑنے،قانونی جنگ لڑنے کیلئے کمربستہ ہیں،ایسی ہی پنچایت پنجگرائین ہے جہاں کچھ رائے دہندگان کے ووٹ کاٹ دئیے گئے، کچھ کے نام خفیہ ووٹرفہرست سے شامل کئے گئے خفیہ اس لئے کیونکہ یہ اُمیدواروں کو دکھائی نہ گئی، محکمہ دیہی ترقی کے بلاک ڈیولپمنٹ آفیسر، گرام سیوک ودیگران نے مل کر فاتح قرار دئیے گئے اُمیدوار سے نامعمول مفادات کے عوض جعلی ووٹ بنوانے وپولنگ عملے نے جعلی ووٹ ڈلوانے میں بھرپورمددکی اورعوام کے پسندیدہ اُمیدوار کوآخری لمحات میں 1ووٹ سے ناکام قرار دے دیاگیا جس کے بعد عملے کوعوامی غیض وغضب کاسامناکرناپڑاتاہم حیراکن کن طورپروہ اپنابوریابستراگول کرتے ہوئے وہاں سے فرار ہوئے جس کے بعد اُمیدوارہنس راج نے اپنے حماتیوں وعوام سمیت ڈپٹی کمشنردفترکے باہردھرنادیااور ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرکے پاس اپیل دائرکرتے ہوئے جعلی ووٹوں کوخارج کرنے کی اپیل کی ۔آج کئی روزگزرجانے کے بعدبھی کوئی کارروائی عمل میں نہ لائی گئی جس کے چلتے سیری  پنج گرائیں میں پنچایتی معززین کاایک اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں مقررین نے گورنر ستیہ پال ملک سے ذاتی مداخلت طلب کرتے ہوئے کہاکہ وہ اس دھاندلی کی جانچ کرتے ہوئے عوام کیساتھ انصاف کریں ورنہ عوام احتجاجی مہم چھیڑنے پرمجبورہوجائیگی۔مقررین نے کہاکہ وہ اپناحق مانگ رہے ہیں، وہ ملک کی خوبصورت جمہوریت میں یقین رکھنے والے ہیں جنہوں نے بڑی اُمیدکیساتھ اپنااُمیدوار میدان میں لایااور اسے ووٹ دئیے لیکن جمہوریت کی دھجیاں اُڑاتے ہوئے مخالف اُمیدوار تھوڑورام وچناوی عملے محکمہ دیہی ترقی کے ملازمین نے عوام کیساتھ دھوکہ کیااورووٹرفہرستوںمیں دھاندلیوں کے علاوہ جعلی ووٹ ڈلوائے۔جوکسی بھی صورت میں قابل قبول نہیں۔مقررین نے بلاتاخیرمعاملے کی جانچ اورانصاف کی فراہم کامطالبہ کیا۔
 

تازہ ترین