آسیہ اندرابی کیخلاف چارج شیٹ پر عدالت کا نوٹس

محبوس دختران ملت سربراہ اور ساتھیوں کو پیش عدالت کرنے کا حکم صادر

7 دسمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

سرینگر// تفتیشی ادارے’’این آئی ائے‘‘ کی خصوصی عدالت نے دختران ملت سربراہ آسیہ اندرابی اور انکی2ساتھیوں ناہیدہ نصرین و فہمیدہ صوفی کو12دسمبر کو عدالت کے سامنے پیش کرنے کی ہدایات جاری کی ہیں۔ این آئی ائے کی طرف سے حال ہی میں عدالت میں آسیہ اندرابی،فہمیدہ صوفی اور ناہیدہ نصرین کے خلاف چالان میں انکے خلاف عائد کئے گئے الزامات کا نوٹس لیتے ہوئے یہ وارنٹ جاری کی ہے۔ اس سے قبل14نومبر کو قومی تفتیشی ایجنسی(این آئی ائے) نے دختران ملت سربراہ آسیہ اندرابی اور انکی دست راست فہمیدہ صوفی کے علاوہ قریبی ساتھی ناہیدہ نصرین کے خلاف سماجی میڈیا کے مختلف شعبوں پر ’’ملک کے خلاف جنگ چھیڑنے‘‘سے متعلق نئی دہلی کے پٹیالہ ہاوس میں این آئی کے کے خصوصی جج کے سامنے چارج شیٹ پیش کیا تھا۔ این آئی کا کہنا ہے کہ آسیہ اندرابی،فہمیدہ صوفی اور ناہیدہ نصرین سماجی رابطہ گاہوں کے مختلف پلیٹ فارموں جن میں ٹیوٹر،فیس بک،یو ٹیوب و ٹی وی چنلیں بشمول ان میں سے کچھ پاکستانی چینلیں بھی شامل ہے،پر ’’بھارت کے خلاف نفرت آمیز پیغامات اور تقاریر کے علاوہ سرکشی‘‘ پھیلاتی تھی۔چارج شیٹ میں کہا گیا تھا کہ دختران ملت بھارت مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہے،اور لوگوں کو پاکستان میں موجود جنگجو تنظیموں کی مدد اور اعانت سے حکومت ہند کے خلاف عسکری بغاوت کیلئے اکسا رہی ہے۔ این آئی نے امسال27 اپریل کوآسیہ اندرابی،فہمیدہ صوفی،ناہیدہ نصرین اور دیگر لوگوں کے خلاف ایک کیس زیر ایف آئی آر نمبر RC-17/2018/NIA-DLI  زیر دفعات120B, 121, 121A, 124A, 153A, 153Bاور505تعزیرات ہند اور زیر دفعات 18, 20, 38و39غیر قانونی سرگرمیاں(انسداد) قانون1967 کے تحت این آئی ائے پولیس تھانہ دہلی میں درج کیا تھا۔اس کے بعد تینوں خواتین کو6 جولائی کو گرفتار کیا،جس کے بعد وہ تہاڑ جیل دہلی میں قید ہیں۔
 

تازہ ترین