تازہ ترین

ممبئی ہائی کورٹ کاایک بار پھر کرنل پروہیت کی عرضداشت پر سماعت کرنے سے انکا ر

6 دسمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

ممبئی //ممبئی ہائی کورٹ کی دو رکنی بینچ نے آج یہاں لفٹنٹ کرنل شریکانت پروہیت کی عرضداشت پر فوری سماعت کرنے انکار کردیا جس سے بھگواء ملزم کو زبردست جھٹکا لگا کیوں نچلی عدالت نے سرکاری گواہوں کے بیانات کا اندراج شروع کردیا ہے نیز اسی درمیان جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) کی جانب سے داخل مداخلت کار کی عرضداشت کو سماعت کے لیئے منظورکرلیا۔موصولہ اطلاعات کے مطابق آج ممبئی ہائی کورٹ کی دورکنی بینچ کے جسٹس ساونت اور جسٹس جمعدار کے روبرو یو اے پی اے قانون کے اطلاق کے خلاف داخل اپیل پر سماعت متوقع تھی لیکن عدالت نے یہ کہتے ہوئے معذرت کرلی کہ ابھی ان کے پاس وقت نہیں ،اسی درمیان متاثرین کی نمائندگی کرتے ہوئے جمعیۃ علماء کے وکیل شاہد ندیم نے عدالت سے گذارش کی کہ اسی معاملے میں کرنل پروہیت کی عرضداشت کی مخالفت کرنے کے لیئے متاثرین کی جانب سے مداخلت کار کی عرضداشت داخل کی گئی جسے کرنل پروہیت کی پٹیشن کے ساتھ ٹیگ(منسلک) کیا جائے اور اس کی بھی سماعت ساتھ میں کی جائے جسے عدالت نے منظور کرلیا اور عدالتی اہلکاروں کو حکم دیا کہ معاملے کی اگلی سماعت یعنی کے ۱۳؍ دسمبر کو ان تمام عرضداشتوں کی سماعت ایک ساتھ کیئے جانے کے اقدامات کیئے جائیں۔