تازہ ترین

ہفتہ حقوق انسانی

6 دسمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک

تاجروں کے احتجاجی دھرنے پر قدغن 

  یاسین خان سمیت درجنوں تاجرحراست میں،شہر خاص میں ریلی برآمد

سرینگر//پولیس نے بدھ کو ’ہفتہ انسانی حقوق‘ کے سلسلے میں تاجروں کے احتجاجی دھر نے پر قدغن لگاتے ہوئے کشمیر اکنامک الائنس کے سربراہ محمد یاسین خان کو ایک چھاپہ مار کارروائی کے دوران آبی گزر سے گرفتار کرلیا جبکہ تاجروں کی جانب سے پریس کالونی میں دھرنا دینے کی ایک کوشش کو بھی پولیس نے ناکام بناتے ہوئے درجنوں تاجروںکو حراست میں لیا ۔تاہم شہر خاص کے قدیم بازار ’مہاراج گنج ‘ کی بیوپار منڈل نے مبینہ انسانی حقوق پامالیوں کے خلاف ایک احتجاجی ریلی برآمد کی ۔ مشترکہ مزاحمتی قیادت کی جانب سے ’ہفتہ انسانی حقوق ‘ منانے کی کال پر بدھ کو کشمیر ی تاجروں کو اپنا احتجاج درج کرنا تھا ،تاہم پولیس نے چھاپہ مارکارروائیوں کے تاجروں کی قبل ازوقت ہی کوششیں ناکام بنا دی۔پولیس نے کشمیری تاجروں کی تنظیم کشمیر اکنامک الائنس (کے ای اے )کے چیئرمین محمد یاسین خان کو ایک چھاپہ مار کارروائی کے دوران آبی گزر میں واقع اُنکے دفتر سے اُنہیں گرفتار کیا ۔یاد رہے کہ محمد یاسین خان کو ’ہفتہ انسانی حقوق‘ کے سلسلے میں تاجروں کے احتجاجی مظاہرے کی قیادت کرنی تھی ،تاہم پولیس نے اس احتجاج پر قد غن لگا دی ۔اس دوران درجنوں تاجر کڑاکے کی سردی میں پریس کالونی میںنمودار ہوئے ،جہاں انہوں نے انسانی حقوق کی مبینہ پامالیوں کے خلاف اپنا احتجاج درج کرنے کی کوشش کی ۔ پولیس نے فوری طور پر کارروائی عمل میں لاتے ہوئے درجنوں تاجروں کو حراست میں لیکر تھانہ نظر بند رکھا ۔اس دوران شہر خاص کے قدیم بازار ’مہاراج گنج ‘ کی بیوپار منڈل نے ایک احتجاجی ریلی برآمد کی،جس میں شہر خاص کے تاجروں نے شرکت کی۔ریلی میں شامل شرکاء نے عام شہریوں کی ہلاکت پر اپنا احتجاج درج کیا جبکہ چھروں والی بندوق کے استعمال پر برہمی کا اظہار کیا ۔
 

آنچار صورہ اور چھتہ بل میں شمع بردار احتجاج

سرینگر//مشترکہ مزاحمتی قیادت کے ہفتۂ احتجاج کو آگے بڑھاتے ہوئے کل تیسرے روز بھی لبریشن فرنٹ کے کئی قائدین و اراکین نے عوام الناس کے ساتھ مل کر کئی مقامات پر مشعل و شمع بردار احتجاجی مظاہرے منعقد کئے۔ فرنٹ سے وابستہ قائدین و اراکین زندگی کے دوسرے شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں کے ہمراہ کل آنچار صورہ اورچھتہ بل میں جمع ہوئے اورہاتھوں میںروشن مشعلیں اور شمع تھامے اور وادی میں جاری ظلم و جبر کے خلاف فلک شگاف نعرے بلند کرتے ہوئے پرامن طریقے پر مارچ کیا اور دھرنا بھی دیا۔ ان مواقع پر شرکائے احتجاج تک لبریشن فرنٹ کے محبوس و علیل چیئرمین محمد یاسین ملک کا پیغام بھی پہنچایا گیا۔ اسی طرح کا احتجاج نصر اللہ پورہ بڈگام میں بھی ہوا ۔
 

 چھاپہ مارکاروائیاںجارحانہ طرز عمل:میر واعظ 

سرینگر// حریت (ع) چیرمین میر واعظ عمر فاروق نے پولیس کی جانب سے مزاحمتی کارکنان کے خلاف چھاپہ مار کارروائی کی مذمت کی ہے ۔انہوں نے سماجی رابط ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ہفتہ انسا نی حقوق کے پیش نظر سرینگر میں کئی مزاحمتی کارکنان کی رہائشی گاہوں پر پولیس کی جانب سے شبانہ چھاپے ڈالے گئے ،جس دوران مزاحمتی کارکنان کے اہلخانہ کو حراساں کیا گیا اور کئی ایک کی مار پیٹ کی گئی جبکہ گرفتاریاں بھی عمل میں لائی گئی ۔ان کا کہناتھا کہ’ کینڈل لائٹ احتجاج ‘کے خلاف یہ کیسا ریاستی جا رحانہ طرز عمل ہے ؟۔