تازہ ترین

۔16جون کی فورسز کارروائی ، اننت ناگ میں نوجوان کی ہلاکت کا اعتراف

1 دسمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

بلال فرقانی
سرینگر//پولیس نے اس بات کو تسلیم کیا ہے کہ16جون کو عیدالفطر کے روز اننت ناگ کی جنگلات منڈی میں فورسز اور نوجوانوں کے درمیان جھڑپ میں ایک شہری شیراز احمدفورسز کارروائی میں زخمی ہونے کے بعد جاں بحق ہوا۔16جون کو عید کے روز اسلام آباد(اننت ناگ) میں  شیراز احمد نامی ایک نوجوان جنگلات منڈی کے نزدیک احتجاج کے بیچ ہی جاں بحق ہوا تھا۔ہلاکت سے متعلق انٹرنیشنل فورم فار جسٹس نے انسانی حقوق کے مقامی کمیشن میں عرضی زیر نمبر SHRC/203/Ang/2018 دائر کرتے ہوئے ان واقعات کی تحقیقات کا مطالبہ کیا تھا۔فورسز کے ہاتھوں جاں بحق شہری کی ہلاکت کے پیش نظر ریاستی کمیشن کے چیئرمین جسٹس(ر) بلال نازکی نے پولیس اور ضلع انتظامیہ کے سربراہاں کو مکمل تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی تھی۔ پولیس نے اس ہلاکت سے متعلق رپورٹ میں اس بات کو تسلیم کیا ہے کہ  عید الفطر کے روز احتجاجی مظاہرین کے ساتھ نپٹنے کے دوران فورسز کارروائی میں شیراز احمد ساکن براکہ پورہ زخمی ہوا تھا،جو بعد میں زخموں کی تاب نہ لاکراسپتال میں چل بسا۔رپورٹ کے مطابق شیراز اس وقت زخمی ہوا تھا،جب پولیس اور فورسز اہلکاروں نے ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے پیلٹ اور ٹیر گیس کا استعمال کیا۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ16جون کو عید گاہ اہلحدیث اشاجی پورہ اور عید گاہ حنفیہ جنگلات منڈی میں عید نماز کے اختتام کے بعد مشتعل ہجوم نے حنفیہ عیدگاہ اور پولیس تھانہ جنگلات منڈی کے ا رد گرد تعینات اہلکاروں پر سنگباری کی،جبکہ پولیس اور دیگر فورسز اہلکاروں نے مظاہرین کو پرامن طریقے سے منتشر کرنے کی کوشش کی،تاہم ہجوم نے متشددانہ طریقے پر مسلسل فورسز کو خشت باری کا نشانہ بنایا۔رپورٹ کے مطابق’’پولیس اور دیگر فورسز اہلکاروں نے جواب میں اشک آوار گیس کے کچھ گولے اور پیلٹ داغے،تاکہ شرپسندوں کو منتشر کیا جائے،تاہم اسی اثناء میں سنگبازی کادائرہ قصبے کے دیگر علاقوں تک پھیل گیا‘‘۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ اس دوران شیراز احمد نائیکوسنگبازی کے دوران زخمی ہوا اور بعد میں چل بسا۔اس سے قبل عرض گزار کی طرف سے بشری حقوق کمیشن میں دائر کئے گئے درخواست میں کہا گیا ہے ’’ لوگوں کو پرامن طریقے سے عید منانے کے برعکس فورسز نے دانستہ طور پر صورتحال کو خراب کیا ‘‘۔عرضی میں کہا گیا’’ فورسز کی کاروائی میں17افراد زخمی ہوئے،جبکہ دو نوجوانوں کی آنکھوں میں پیلٹ لگے تھے۔