تازہ ترین

پاکستان میں امریکی ڈرون کا استعمال

۔ 14برسوں میں409حملے،2714جانیں تلف

10 نومبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

 اسلام آباد//امریکہ نے پاکستان کی سرزمین پرموجود جنگجوئوں کو نشانہ بنانے کی آڑمیں خطرناک قسم کے ڈرون کااستعمال کرکے جنگجوئوں کاخاتمہ تونہیں کیابلکہ ہزاروں معصوم اورامن پسندوں کی جان لی۔ جنوی2004 سے سال2018تک امریکہ کی جانب سے پاکستان میں کل409 ڈرون حملے کئے گئے ،اوران ہلاکت خیزڈرون حملوں کے دوران 2714افراد مارے گئے جبکہ728 دیگر زخمی ہوئے ہیں۔اطلاعات کے مطابق امریکی خفیہ ایجنسی ’سی آئی اے‘ کے زیر کنٹرول’ ڈرون طیاروں‘ کے ذریعہ پاکستان میں باجور، بانو ، ہانگو ، خیبر ، خرم ، مہمند ، شمالی وزیرستان ، مشکی ، اورک زئی اور جنوبی وزیر ستان میں حملے کئے گئے۔اطلاعات کے مطابق سب سے زیادہ ڈرون حملے 2008 سے2012 کے درمیان پاکستان پیپلز پارٹی کے دور اقتدار میں ہوئے۔ نیشنل کاونٹر ٹیرزم اتھارٹی ( ناکٹا ) کے ذرائع کے مطابق اس مدت میں 336 فضائی حملے ہوئے ، جن میں 2282 لوگوں کی جانیں تلف ہوئیں اور 658 دیگر زخمی ہوئے۔ ناکٹاافسران کے مطابق صرف2010 میں 117 حملے ہوئے ، جن میں 775 افرد مارے گئے اور193 لوگ زخمی ہوئے تھے۔ اطلاعات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ نواز کے دور اقتدار میں2013 سے2018 تک65 ڈرون حملے ہوئے،اور ان میں301 افراد مارے گئے جبکہ70 دیگر زخمی ہوئے۔تاہم رواں برس یعنی سال2018 میں2 ڈرون حملے ہوئے ، جس میں ایک شخص مارا گیا اور ایک زخمی ہوا۔ تحریک پاکستان کا سینئرلیڈر ایسے ہی ڈرون حملے میں مارا گیا۔ طالبان سرغنہ ملا اختر منصور بھی ایسے ہی ڈرون حملے میں مارا گیا تھا۔
 

تازہ ترین