تازہ ترین

۔8روز بعدمغل روڈ سے برف ہٹانے کا کام مکمل

جلد ہی ٹریفک کیلئے کھول دیا جائیگا، سرینگر لیہہ شاہراہ 8روز سے بند

9 نومبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

شاہد ٹاک +سمت بارگو
 شوپیان+راجوری//وادی کشمیر کو خطہ پیر پنچال سے ملانے والا متبادل راستے مغل روڈ پر برف ہٹانے کا کام مکمل کرلیا گیا ہے اور اسے ٹریفک کی آمد رفت کیلئے جلد ہی کھول دیا جائے گا۔ ایگزیکٹو انجینئر مغل روڈ پروجیکٹ مقبول حسین نے کشمیرعظمیٰ سے بات کرتے ہوئے بتایاکہ بفلیاز سے پیر گلی تک کے حصے سے گزشتہ شام برف صاف کردی گئی جبکہ پیر گلی سے شوپیاں کی طرف آدھے کلو میٹر سے برف جمعرات کی صبح صاف کرکے سڑک کو ٹریفک کیلئے بحال کردیاگیا۔انہوںنے بتایاکہ شاہراہ پر سات میٹر کی چوڑائی تک برف صاف کی گئی ہے ۔ڈی وائی ایس پی سرنکوٹ ریاض احمد نے بتایاکہ حکام کی پہلی ترجیح ان گاڑیوں کو نکال کر اپنی اپنی منزل پرپہنچاناہے جو ایک ہفتے سے درماندہ ہیں ۔انہوںنے بتایاکہ 104گاڑیاں درماندہ تھیں ۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ آٹھ رو ز قبل بھاری برفبار ی ہونے پر خطہ پیرپنچال کو وادی کشمیر سے ملانے والی تاریخی مغل شاہراہ بند ہوگئی جس کے نتیجہ میں ڈیڑھ سو سے زائد مسافراور ڈرائیور جبکہ سینکڑوں گاڑیاں درماندہ ہوکر رہ گئیں تاہم پولیس اور فوج نے تین روز تک مشترکہ کارروائی جاری رکھ کرمسافروں اور ڈرائیوروں کو بحفاظت نکال لیاجبکہ کچھ گاڑیاں برف میں ہی موجود رہیں جنہیں اب نکالاجارہاہے ۔اسسٹنٹ ایگزیکٹیو انجینئر مغل روڈ منصور احمد نے بتایا کہ دونوں اطراف سے راستہ کو ٹریفک کی آمد رفت کے لئے تیار کیا گیا ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ دونوں اطراف کے ضلع ترقیاتی کمشنر روڈ کا جائزہ لے کر یہ طے کرینگے کہ روڈ کو ٹریفک کے لئے کب کھول دینا ہے۔ادھرسرینگر لہیہ شاہراہ پرجمعرات کو مسلسل 8ویں روز بھی ٹریفک کی آوا جاہی بحال نہ ہوسکی اور یہ اہم شاہراہ آٹھویں روز بھی بند رہی ۔حکام کا کہنا ہے کہ زوجیلا پاس پر 11فٹ برفباری ہوئی جسکی وجہ سے شاہراہ آمد ورفت کے قابل نہیں رہی ۔انہوں نے کہا کہ بیکن نے شاہراہ سے برف ہٹانے کا سلسلہ شروع کردیا جسکے لئے افرادی قوت کے ساتھ ساتھ جدید مشینری کو بھی بروئے کار لایا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ بیکن کی ہری جھنڈی ملنے کے بعد ہی شاہراہ پر ٹریفک کی آ وا جاہی کو بحال کردیا جائیگا ۔
 

تازہ ترین