تازہ ترین

پٹاخے جلانے والوں کیخلاف پولیس کی سختی

دہلی میں562لوگوں کے خلاف معاملہ درج

9 نومبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نئی دہلی//سپریم کورٹ کے حکم کے باوجود قومی دارالحکومت میں کئی لوگ دیوالی پر طے وقت کے بعد بھی پٹاخے جلاتے رہے جن میں سے 562لوگوں کے خلاف پولیس نے کارروائی کرکے معاملہ درج کیا ہے ۔ پولیس کے ایک سینئر افسر کے مطابق دیوالی میں پٹاخے جلانے کے معاملے میں سپریم کورٹ کے حکم کو سختی سے نافذ کرانے کے لئے پولیس نے خصوصی انتظام کئے ۔دارالحکومت کے سبھی علاقوں میں پٹاخوں کو طے وقت تک جلانے کے حکم کو نافذ کراکے لئے کئی ٹیمیں بنائی گئی تھیں۔پولیس کے اعلی افسران نے بھی کئی علاقوں میں گشت کرکے معائنہ کیا۔ افسر نے بتایا کہ دہلی کے 13اضلاع میں تعزیرات ہندکی دفعہ 188کے تحت562معاملے درج کئے گئے ہیں۔اس کے علاوہ چائلڈ جسٹس ایکٹ کے تحت 24بچوں کے خلاف بھی قانونی کارروائی کی گئی۔دھماکہ خیز مواد ایکٹ کے تحت 72معاملے درج کئے گئے ہیں۔غیر قانونی طورپر پٹاخے فروخت کرنے کے معاملے میں 87افراد کو گرفتار کئے گئے ہیں۔ نئی دہلی ضلع میں سرکاری احکامات کی خلاف ورزی کرنے کی کارروائی کرتے ہوئے چھ لوگوں کو گرفتار کیا گیا ہے ۔دواریکا ضلع میں 20لوگوں کو گرفتار کیاگیا ہے اور 460کلوگرام دھماکہ خیز مواد ضبط کیاگیا ہے ۔جنوب مشرقی ضلع میں 14لوگوں کو گرفتار کیاگیا ہے ۔سپریم کورٹ کے حکم کے بعد بھی دیوالی کے موقع پر بدھ کی رات جم کر پٹاخے جلائے گئے جس کا اثر جمعرات کی صبح دیکھنے کو ملا۔دہلی کے تقریباً ہرعلاقے میں حد بصارت کم ہوگئی ہے ۔چاروں طرف دھواں ہی دھواں نظر آرہا ہے ۔ سپریم کورٹ نے دیوالی اور دیگر تہواروں کے موقع پر رات آٹھ سے 10بجے کے درمیان ہی پٹاخے جلانے کی اجازت دی تھی۔عدالت نے صرف 'گرین پٹاخے 'بنانے اور فروخت کی اجازت دی تھی۔ دہلی پولیس کمشنر امولیے پٹنائک نے دیوالی کی رات سڑکوں پرتعینات پولیس اہلکاروں کوتحفہ میں مٹھائی دے کر دیوالی کی مبارکباد دی تھی۔یواین آئی
 

تازہ ترین