تازہ ترین

نظمیں

28 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

لائحہ عمل
اپنا مقصد عملِِ صالح کو بنانا چاہئے
نیک کاموں سے ہی اپنا دل لگانا چاہئے
ہم ہوئے پیدا کہ ہو سب کے عمل کا امتحاں!
وعدۂ میثاق کو اب تو نبھانا چاہئے
ساری خلقت ہے عیالِ خالقِِ ارض و سما
اس لئے اوروں کے بھی کچھ کام آنا چاہئے
چاہتے گر ہو فلاحِ دین و دنیا دوستو
غمزدوں کے دل سے درد و غم مٹانا چاہئے
جب کوئی بھٹکا ہوا ہو زندگی کی راہ میں
اُس کو جاکر راستہ سیدھا دکھانا چاہئے
خدمتِ انسانیت دنیا میں ہے یہ بہتریں
درد وغم سے درد مندوں کو چُھڑانا چاہئے
 
بشیر احمد بشیرؔ (ابن نشاطؔ) کشتواڑی
موبائل نمبر؛7006606571 
 
 
نظم
 
خاک میں ہونگے ہم
جب ڈھونڈے گا زمانہ
روئینگے، ہم سے
بچھڑنے والے
قبر پر آنسوں بہائینگے
میری وہ باتیں
دہرائینگے
"دو چار دن کی زندگی ہے
خاک کا بنا جو آدمی ہے
کرتا ہے کیوں خاک سے نفرت
اک دن خاک میں اترتا ہے"
رُلائینگی ان کو باتیں میری
دو چار دن تک رہے گا ماتم
پھر خدا کے حوالے
وہ بھی میں بھی۔
 
منتظرؔ یاسر 
فرصل کولگام کشمیر
رابطہ:-9070784318/9055225327