لداخ خطے کیلئے اشیائے ضروریہ وقت پر پہنچانے کی ہدایت

گورنر کے مشیر بی بی ویاس کی صدارت میں اعلیٰ سطحی میٹنگ

11 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

سرینگر//گورنر کے مشیر بی بی ویاس نے  ایک میٹنگ طلب کر کے لداخ خطے میں اشیائے ضروریہ کی سٹاک و سپلائی پوزیشن کا جائیزہ لیا ۔ میٹنگ میں صحت و طبی تعلیم کے پرنسپل سیکرٹری اتل ڈولو ، بھیڑ و پشو پالن محکمہ کے پرنسپل سیکرٹری ڈاکٹر اصغر حسن سامون ، کمشنر سیکرٹری بجلی ہردیش کمار ، صوبائی کمشنر کشمیر بصیر احمد خان اور لیہہ و کرگل اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں کے علاوہ دیگر کئی افسران موجود تھے ۔ لداخ خود مختار پہاڑی ترقیاتی کونسل لیہہ اور کرگل کے چیف ایگزیکٹو کونسلروں نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے میٹنگ میں شرکت کی ۔ اس موقعہ پر مشیر موصوف نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ موسمِ سرما کی آمد کے پیش نظر تمام ضروری اشیاء کی لداخ خطے میں دستیابی کو یقینی بنانے کے اقدامات کریں ۔ میٹنگ میں تفصیلات دیتے ہوئے اتل ڈولو نے کہا کہ لیہہ اور کرگل اضلاع میں حیات بخش ادویات کا وافر سٹاک دستیاب رکھا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دونوں اضلاع کی ضروریات کے مقابلے میں اب تک 80 فیصد ادویات اور مشینیں خطے میں پہنچائی گئی ہیں ۔ راشن کی دستیابی سے متعلق مشیر کو بتایا گیا کہ لداخ خطے کے دونوں اضلاع میں اشیائے خوردنی کی وافر مقدار دستیاب رکھی گئی ہے ۔ انہیں بتایا گیا کہ خطے میں رسوئی گیس اور تیل خاکی کا مناسب ذخیرہ کیا گیا ہے ۔  مشیر کو بتایا گیا کہ کرگل میں 40 ہزار کوئینٹل عمارتی لکڑی کی مانگ کے مقابلے میں 35  ہزار کوئینٹل عمارتی لکڑی پہنچائی گئی ہے جبکہ لیہہ میں دس ہزار کوئینٹل مانگ کے مقابلے میں 6500 کوئینٹل عمارتی لکڑی روانہ کی گئی ہے ۔  بجلی کے کمشنر سیکرٹری نے میٹنگ میں بتایا کہ کرگل ضلع میں 45   بجلی ٹرانسفارمروں کی مانگ درج کی گئی ہے جبکہ 38 ٹرانسفارمر بہم پہنچائے گئے ہیں ۔ اس کے علاوہ 4100 بجلی پول بھی کرگل بھیجے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ 7800 بجلی پول لیہہ بھیجے گئے ہیں ۔  پہاڑی ترقیاتی کونسل لیہہ اور کرگل کے چئیر مینوں نے دونوں اضلاع میں ضروری اشیاء کی سٹاک اور سپلائی پوزیشن پر اطمینان کا اظہار کیا ۔
 

تازہ ترین