تازہ ترین

شاہراہِ کربلا

16 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

راکبِ دوشِ نبیؐ ماہِؓتمامِ کربلا
 
مرگِ زیب و زینتِ دُنیا امامِؓکربلا
کربلا ہے بہرِ اُمّت شاہراہِ جاوِداں
 
کوئی کرتا ہی نہیں ہے اہتمامِ کربلا!
کربلا کا ہے نہیں مقصد فقط آہ و فغاں
 
خاتمۂ یزیدّیت میں ہے دوامِ کربلا
کارواں سُوئے حرم گُم گشتہ منزل، حسرتا!
 
تھامنے والا نہیں کوئی زمامِ کربلا
قتل و غارت کا گرم بازار ہے کشمیر میں
 
ہر صبح ہے کربلا، ہر شام شامِ گربلا
اختلاطِ مرد و زن کا ہر طرف سیلاب ہے
 
بِنتِ مسلم کر رہی ہے اِنہدامِ غلام
اہل بیتِ مُصطفیٰؐ کے ہوں غلاموں کا غلام
 
یہ دلِ مشتاقؔ ہے یا ہے مقامِ کربلا
 
مشتاقؔ کشمیری
رابطہ؛ سرینگر،9596167104