تازہ ترین

محرم الحرام 1440ہجری

12 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

انجمن شرعی شیعیان کاوفد صوبائی کمشنر کشمیر سے ملاقی 

سرینگر//انجمن شرعی شیعیان کا ایک وفد پیر کو صوبائی کمشنر کشمیر سے ملاقی ہوا۔ وفد نے صوبائی کمشنرکو8اور 10 محرم کے تاریخی جلوسوں پر 3 دہائیوں سے قدغن سے پیدا شدہ صورتحال کو زیر بحث لایا۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ اس پابندی کو بلاتاخیر ہٹادیا جائے۔ وفد نے واضح کیا کہ  جلوس ہائے عزا سے متعلق اُس وقت کے حکمرانوں اور شیعیان کشمیر کی قیادت کے درمیان طے پائے معاہدے کی ہر صورت میں پاسداری کی جائے کیونکہ یہ معاہدے وسیع ترین مشاورت اور تمام پہلوئوں کو مدنظر رکھتے ہوئے طے پائے ہیں۔بیان کے مطابق 8محرم کو گروبازار سے بہ راستۂ مولانا آزاد روڑ تا حیدریہ حال ڈلگیٹ علم شریف کا جلوس اور 10 محرم کو آبی گزر سے بہ راستۂ گاؤکدل، حبہ کدل و راجوری کدل تا علی پارک جڈی بل ذوالجناح کا جلوس فرقہ وارانہ رواداری اور یکسان عقیدت کے حامل ہیں۔انہوں نے کہا کہ ان جلوسوں کیلئے متبادل راستوں کی تجاویز ناقابل قبول ہیں۔ دریں اثنا ء انجمن شرعی شیعیان کے سربراہ آغا سید حسن نے عامۃ المسلمین سے استدعا کی ہے کہ وہ 8اور 10محرم کے تاریخی جلوسوں میں جوق در جوق شرکت کرکے اتحاد و اخوت کا بھر پور مظاہرہ کریں۔
 

پولیس کی مختلف تنظیموں سے گفت وشنید  

سرینگر//محرم الحرام کے مقدس مہینے کے دوران ذوالجناح جلوسوں کو احسن طریقے سے منزل مقصود تک پہنچانے کی خاطر جڈی بل پولیس اسٹیشن میں مختلف تنظیموں کے نمائندوں کے ساتھ میٹنگ کا انعقاد عمل میں لایا گیا۔ ایس ڈی پی او حضرت بل رمیض رشید اور ایس ایچ او پولیس اسٹیشن جڈی بل توصیف احمد کی سربراہی میں منعقدہ اس میٹنگ کے دوران مختلف معاملات پر تبادلہ خیال ہوا ۔ میٹنگ کے دوران شرکاء کو یقین دلایاگیا کہ ایام متبرکہ کے دوران عزاداروں کو پولیس کی جانب سے ہر طریقے سے سہولیات بہم رکھی جائیں گی جبکہ ذوالجنا ح جلوسوں کے دوران ٹریفک روٹ پلان اور فورسز کی تعیناتی پر بھی گفت شنید ہوئی ۔شرکاء نے میٹنگ کے دوران 8،9،10اور 11محرم الحرام کے دوران ٹریفک کی آواجاہی کو علی جان روڑ سے یقینی بنانے پر زور دیا تاکہ عزاداروں کو کسی مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔
 

پابندیوں کے باوجود مرکزی جلوس برآمد ہونگے:تحریک وحدت اسلامی

سرینگر//تحریک وحدت اسلامی کے چیئرمین نثار حسین راتھر نے محرم الحرام کی آمد پرایران کے سپریم لیڈرسید علی خامنہ ای کی خدمت میں تعزیت و تسلیت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ تاریخ اسلام میں واقعہ کر بلا ایک ایسا فیصلہ کن مرحلہ تھا جس نے حق و باطل کے مابین ایک ایسی حد فاصل قائم کی کہ قیامت تک باطل کو حق کے ساتھ ملایا نہیں جا سکتا۔انہوں نے کہا ’’آئیے ہم بھی مصائب و آلام کے گر داب سے نکلنے کیلئے دامن حُسین ؑ کو تھام لیں اور طاغوت ہائے زمانہ کی غلامی کی زنجیروں کو اُکھاڑ پھینکنے کا عزم و عہد کریں‘‘۔انہوں نے مزید کہاکہ 8 اور10محر م الحرم کے مرکزی جلوس حسب معمول مقررہ روٹوں سے حکومتی پابندیوں کے باوجود برآمد ہونگے۔