گنگا کو ہر حال میں آلودگی سے پاک کرائیں گے :گڈکری

12 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

باغپت//گنگا کو آلودگی سے پاک بنانے کا عہد دہراتے ہوئے سڑک ٹرانسپور اور شاہراہوں، دریاؤں کی ترقی اور گنگا کے تحفظ کے مرکزی وزیر نتن گڈکری نے منگل کے روز کہا کہ اس برس کے آخر تک 70 سے 80 فیصد تک گنگا کو صاف کردیا جائے گا۔ گڈکری نے کہا کہ گنگا کی صفائی کا کام تیزی سے چل رہا ہے اور اس کے مثبت نتائج بھی برآمد ہورہے ہیں۔ ہم گنگا کو 70 سے 80 فیصد تک شفاف کرکے دکھائیں گے ۔ انہوں نے باغپت میں گندے پانی کو صاف کرنے والے 100 کروڑ روپے کے پروجیکٹ کا اعلان کیا، جس کے بعد باغپت کی ندیوں اور نالوں سے نکلنے والا گندا پانی واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کے ذریعہ صاف ہوکر جمنا میں جائے گا۔بڑوٹ میں دلی سہارن پور قومی شاہراہ کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد جنتا ویدک انٹر کالج میں منعقدہ ایک جلسے سے قبل انہوں نے دلی سہارنپور قومی شاہراہ کھیکڑا شاملی بلاک پروجیکٹ کے ساتھ 33 ترقیاتی پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد رکھا۔ انہوں نے کہا کہ دلی کے نزدیک کھیکڑا سے شاملی پہلے سیکشن تک قومی شاہراہ نمبر 709 بی کی کل لمبائی 61 اعشاریہ 409 کلومیٹر کی ہوگی، جس پر تقریباً 726 کروڑ روپے کی لاگت آنے کا اندازہ لگایا گیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ یہ پروجیکٹ اپریل 2020 کے تک 18 مہینوں میں مکمل ہوجائے گا۔ اس سے سڑک کے ساتھ ساتھ علاقے کی ترقی کو بھی رفتار ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی تصویر بہت تیزی سے بدل رہی ہے ۔ دیہی علاقوں کو لیکر شہری علاقوں تک ترقی ہورہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم کسانوں کے گنے سے چینی کے ساتھ ساتھ اس کے شیرے سے ایتھنول بھی بنائیں گے ۔مسٹر گڈکری نے کہا کہ مرکزی حکومت کا ہدف ہر شخص کو ترقی سے جوڑنا، ہر گاؤں کو کنکٹی وٹی دینا، انٹرنیٹ سے جوڑنا، ہر گھر میں گیس کنکشن کے ساتھ ساتھ گاؤں کے غریب مزدور کا مستقبل بدلنا ہے ۔ کسانوں کی آمدنی کو دوگنا کیا جائے گا اور گنے کی پیداوار کو بڑھایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اترپردیش کے کسان نئی نئی ٹکنالوجی کا استعمال کرکے گنے کی پیداوار میں اضافہ کررہے ہیں۔ جہاں پہلے 9.30 فیصد کی ریکوری ہوتی تھی، وہیں آج گنے سے 10.30 فیصد کی شوگر ریکوری ہورہی ہے ۔ جس سے اترپردیش کے کسان ترقی کی راہ پر آگے بڑھ رہے ہیں۔یو این آئی
 

تازہ ترین