تازہ ترین

وجے کمار کادورہ جنوبی کشمیر

ترقیاتی منظر نامے کا جائیزہ لینے کے علاوہ عوام سے تبادلہ خیال کیا

11 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

سرینگر//گورنر کے مشیر کے۔ وجے کمار نے جنوبی کشمیر کے کولگام، شوپیاں، اننت ناگ اور پلوامہ اضلاع کا دورہ کر کے ترقیاتی منظر نامے اور عوامی مشکلات کا جائیزہ لیا۔ اُن کے ہمراہ چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم، صوبائی کمشنر بصیر احمد خان، اے ڈی جی پی لاء اینڈ آرڈر منیر احمد خان اور آئی جی پی کشمیر ایس پی پانی بھی تھے۔کولگام میں ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر شمیم احمد نے صلاحکار کا استقبال کیا جہاں انہوں نے مقامی افراد کے مطالبات سُنے۔کھڈونی، کیموہ، فرسل، ڈمی ڈولا، ہاؤرہ، ونپورہ اور دیگر دیہاتوں کے وفود نے اپنے مطالبات مشیر کے سامنے رکھے۔ کھڈونی کے وفد نے ہیلتھ سینٹر کے قیام، قبرستان کے نزدیک تحفظاتی باندھ کی تعمیرجبکہ کیموہ کے وفد نے ڈگری کالج کے قیام، گرلز ہائی سکول کی اپ گریڈیشن، کیموہ میں منی سیکرٹریٹ اور منصف کورٹ کے قیام اور فرسل کے وفد نے نیابت کے قیام اور فرسل میں ڈگری کالج پر فوری طور کام شروع کرنے کی مانگ کی۔صلاحکار نے وفود کو یقین دلایا کہ اُن کی جائیز مانگوں کو پورا کیا جائے گا۔ انہوں نے مختلف شکایات کے ازالہ کے لئے موقعہ پر ہی احکامات صادر کئے۔اس موقعہ پر انہوں نے ضلع میں واٹر سپلائی سکیموں میں معقولیت لانے کے لئے40 کروڑ روپے فراہم کرنے کا بھی اعلان کیا۔شوپیاں میں صلاحکار نے ضلع افسروں کی ایک میٹنگ میں مختلف سکیموں اور پروجیکٹوں کی عمل آوری کا جائزہ لیا ۔ اس دوران ضلع ترقیاتی کمشنر ڈاکٹر اوئس احمد نے ضلع کے ترقیاتی منظر نامے کا تفصیلی خاکہ پیش کیا۔صلاحکار نے متعلقہ ایجنسیوں کو ترقیاتی سکیموں خاص طور سے فروٹ منڈی، ضلع ہسپتال ، پولی ٹیکنک کالج، منی سیکرٹریٹ کمپلیکس، ترنز شیخ پورہ پُل، ریش نگری پُل، بجبہاڑہ ۔ شوپیاں سڑک،اگلر ۔ شوپیاں سڑک، گوجر بکروال ہوسٹل اور دیگر پروجیکٹوں کے کام میں سرعت لانے کے احکامات دیئے۔صلاحکار نے ضلع کے مختلف علاقوں سے آئے ہوئے وفود کے مطالبات سُنے اور ان پر ہمدردانہ غور کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ انہوں نے لوگوں سے کہا کہ سڑکوں کی میکڈیمائزیشن کا کام جون2019 تک مکمل کیا جائے گا جبکہ واٹر سپلائی سکیموں کے کام کو اگلے سام مارچ تک مکمل کیا جائے گا۔ انہوں نے لوگوں کو یقین دہانی کرائی کی سوبھاگیہ سکیم کے تحت مستحقین کو مفت بجلی کنکشن فراہم کئے جائیں گے۔ انہوں نے ڈپٹی کمشنر کو جاری پروجیکٹوں کے کام کی نگرانی کرنے اور تحصیل و بلاک سطحوں پر یومیہ عوامی دربار منعقد کرانے کے بھی احکامات دیئے۔اننت ناگ میں صلاحکار نے دیگر افسران کے ہمراہ عوامی دربار طلب کیا جس میں ملحقہ دیہات کے متعدد وفود نے شرکت کر کے پانی کی سپلائی میں معقولیت، اندرونی سڑکوں کی میکڈیمائزیشن، لفٹ اری گیشن سکیم کی تعمیر، نالوں کی ڈریجنگ، سکولی عمارتوں کی تجدید کاری، صحت مراکز میں عملے کی تعیناتی، ویشو نالے پر تحفظاتی باندھ تعمیر کرنے،2014 کے سیلاب سے ہوئے نقصان کی واجب الادا ریلیف واگذار کرنے، کھیل میدانوں کو فروغ دینے، لوکٹی پورہ میں اری گیشن کنال کی حد بندی، ہسپتال عمارت کی تعمیر، سڑکوں کی میکڈئمائزیشن اور فلڈ پروٹیکشن گیج کی تعمیر کی مانگ کی۔زیری پارہ کے یوتھ کلب نے سب ضلع ہسپتال کی تعمیر ، کھنہ بل سے بجبہاڑہ تک  دریائے جہلم کی ڈریجنگ، بجبہاڑہ کے لئے الگ گرڈ سٹیشن کی تعمیر، میونسپل کمیٹی بجبہاڑہ کے لئے نئی عمارت، فلٹریشن پلانٹ اور میرج ہال کی تعمیر ، زیر پارہ میں غیر قانونی تجاوزات کو ہٹانے کی مانگ کی۔صلاحکار نے جائیز مطالبات ہر لازمی کاروائی کرنے کی یقین دہانی کرائی۔چیف سیکرٹری نے عوام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ضلع میں رُکے پڑے پروجیکٹوں کو مارچ2019 تک مکمل کیا جائے گا جبکہ اپریل 2019 تک58 زیر تعمیر پُلوں کی تعمیر کو مکمل کیا نجائے گا۔ اس کے علاوہ صحت عامہ اور محکمہ بجلی سے متعلق کاموں کو جولائی2019 تک پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے گا تا کہ ضلع میں بلا خلل پانی اور بجلی کی سپلائی کو یقینی بنایا جاسکے۔بعد میں صلاحکار نے پلوامہ کا دورہ کیا جہاں متعدد عوامی نے اُن کے سامھے کئی مطالبات رکھے۔ ٹریڈرس فیڈریشن پلوامہ نے ضلع میں زچگی ہسپتال کی تعمیر ، فروٹ منڈی پلوامہ کے کاموں کے لئے واجب الادا رقومات کی واگذاری اور پلوامہ قصبہ میں سڑکوں کی تجدید و مرمت کی مانگ کی۔اس کے علاوہ ضلع کے مختلف دیہات کے وفود نے ضلع میں سڑک رابطوں کی بہتری ، ڈگری کالج کے قیام، سکولوں کی اپ گریڈیشن، کھیل میدانوں کے فروغ، گرڈ سٹیشن کے قیام اور صحت مراکز کی اپ گریڈیشن کی بھی مانگ کی۔آئی جی سی لاسی پورہ کے صنعتکاروں نے وفد نے ناکارہ پڑی صنعتوں کو بحال کرنے، آئی جی سی سینٹر کے فروغ اور سینٹر میں یونٹ ہولڈروں کے لئے طبی سہولیات کی دستیابی کی مانگ کی۔صلاحکار نے تمام مطالبات بغور سُننے کے بعد ان پر بروقت کاروائی کا یقین دلایا۔انہوں نے عوام کو اپنی مشکلات کے ازالہ کے لئے ضلع انتظامیہ سے رجوع کرنے کی صلاح دی۔چیف سیکرٹری نے لوگوں کو یقین دلایا کہ ضلع میں ہر شعبۂ کو ترقی دی جائے گی اور تمام پروجیکٹو ں کو مقررہ مدت کے اندر مکمل کیا جائے گا۔اس موقعہ پر ضلع ترقیاتی کمشنر غلام محمد ڈار اور دیگر ضلع افسران بھی موجود تھے۔