تازہ ترین

مزید خبرں

11 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

ایکسچینج روڑ لالچوک کا اچانک محاصرہ 

عمارتوں کی تلاشی اور راہگیروں کے شناختی کارڈ چیک 

سرینگر//لالچوک میں سوموار کوبعد دو پہر فورسز نے ایکسچینج روڑ کو محاصرے میں لیا اور تلاشی کارروائی شروع کی تاہم کوئی بھی مشکوک چیز برآمد نہیںہوئی اور نہ ہی کسی کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ۔تاریخی لال چوک اور اس کے ملحقہ علاقوں میں اس وقت افراتفری کا ماحول پھیل گیا جب جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد فورسز کی بھاری جمعیت نے ایکسچینج روڑ اور اس کے آس پاس والے علاقوں کا محاصرہ کرکے وہاں تلاشی کارروائی عمل میں لائی ۔ فورسز نے تلاشی کارروائی کے دوران سرکاری و غیر سرکاری عمارتوں کی تلاشی لی جبکہ راہگیر وں کی شناخت پریڈ بھی کی گئی ۔ علاقے میں کچھ دیر تک تلاشی کارروائی جاری رہی جس کے بعدکوئی بھی مشکوک چیز نہ ملنے کے فورسز نے علاقے کا محاصرہ ختم کیا جبکہ اس دوران کسی کی گرفتاری بھی عمل میں نہیںلائی گئی ۔ تلاشی کارروائی ختم ہونے کے بعد علاقے میں حالات دوبارہ معمول پر آگئے ۔ 
 

عرس مرزا کاملؒ کی اختتامی تقریب 

مولانا ریاض ہمدانی کا خطاب آج 

سرینگر// حضرت شیخ الاسلام مولانا مرزا اکمل الدین بیگخان بدخشیؒ کا 308ویں سالانہ عرس مبارک کی اختتامی تقریب آج یعنی 11ستمبر منگلوار وادی میں عقیدت واحترام کیساتھ منائی جارہی ہے۔ اس سلسلے میں میروعظ کشمیر مولانا ریاض احمد ہمدانی حسب قدیم بقعہ عالیہ میں نمازِ ظہر کے بعد حضرت مرزا صاحبؒ کے عظیم اسلامی کارناموں، سیرت اور روحانی و علمی کمالات پر وعظ فرمائیں گے۔
 
 

معروف ادیبہ ریتا جتیندر حرکت قلب بند ہونے سے فوت

لائیو پروگرام کے دوران انٹرویو دیتے ہوئے موت واقع ہوئی

اشفاق سعید 
 
سرینگر // دور درشن کے لایئو پروگرام گڈ مارننگ جے کے میں سوموار کوپروگرام کے دوران کلچرل اکیڈیمی کی سابق سکریٹر ی اورمعروف قلمکار پروفیسر ریتا جتندر حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے لقمہ اجل بن گئی۔ ریتا جتندر کو پروگرام میں بطور مہمان شرکت کی دعوت دی گئی تھی۔ لایئو پروگرام میں قریب 14منٹ تک بات کرنے کے دوران اُن کی طبیعت اچانک خراب ہو گئی جس کے بعد انہیں صدر ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے مردہ قرار دیا ۔ریتاجیتندر 1993سے 1995 تک ریاستی کلچرل اکیڈئمی کی سیکٹریٹری رہیں اور اکثر وبیشتر دور درشن کے پروگراموں میں حصہ لیتی تھیں ۔دور درشن سرینگر کے ڈائریکٹر جی ڈی طاہر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ لایئو پروگرام میں ریتا جتندر نے قریب 14منٹ تک دلچسپ اور مقصد کی باتیں اچھی طرح کیں اور پھر اچانک اُن کی طبیعت لایئو پروگرام کے دوران ہی خراب ہو گئی ۔انہوں نے کہا کہ وہ ریاست کی مایہ ناز شخصیت تھیں ۔لایئوپروگرام کا ایک ویڈیو بھی وائرل ہو گیا ہے جس میں دیکھا جارہا ہے کہ ریتا جتندر دور درشن کے سٹیڈیو میں کسی سے ملنے اور ڈرامہ لکھنے کے متعلق اینکر کے سوال کا جواب دے رہی تھی، تو اس بیچ وہ باتیں کرتے کرتے خاموش ہو گئی اور اُن کی سانس پھولنے لگی اس بیچ اینکر نے لایئو پروگرام کو بند کردیا۔اس دوران پی ڈی پی لیڈر اور سابق وزیر نعیم اختر نے پروفیسر (ڈاکٹر) ریتا جیتندر کو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ ریاست نے ایک اثاثہ کھودیا ہے۔ نعیم اختر نے کہاکہ ریتا جیتندر کی وفات ادب اور تعلیم پر سوچ بانٹنے کے دوران ہوئی اوراس سے پتہ چلتا ہے کہ ان کا ادب اور تعلیم سے کتنا لگائو تھا۔ نعیم اختر نے لواحقین سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی کہ یہ صدمہ برداشت کرے۔
 

گورنر کا اظہار رنج  

سرینگر//گورنر ستیہ پال ملک نے ایک معروف قلمکار اور سابق سیکرٹری جے اینڈ کے سٹیٹ اکیڈمی آف آر کلچر اینڈ لینگویجز پروفیسر ریتا جتیندر کے انتقال پر اپنے رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔ ایک تعزیتی پیغام میں گورنر نے  غمزدہ کنبے کے ساتھ تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے آنجہانی کی روح کی تسکین کیلئے دعا کی ۔