تازہ ترین

اقوام متحدہ انسانی حقوق کونسل سربراہ کی بھارت کو سرزنش

کشمیر رپورٹ پر نتیجہ خیز پیشرفت نہ کرنے پر برہمی کا اظہار

11 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
 
جینوا // اقوام متحدہ انسانی حقوق کونسل نے کشمیر سے متعلق یو این رپورٹ پر کارروائی نہ کرنے پر بھارت کی سر زنش کرتے ہو ئے کہا کہ کشمیری عوام کو بھی دیگر انسانوں کی طرح برابر کے حقوق فراہم کئے جائیں۔نو منتخب انسانی حقوق سر براہ برائے حقوق انسانی مائیکل بیچ لیٹ نے سوموار کو کشمیر سے متعلق اجاگر کی گئیں انسانی حقوق پامالیوں کے معاملات کے بارے میں شائع شدہ رپورٹ پر نتیجہ خیز پیشرفت نہ کر نے پربھارت کی شدید نکتہ چینی کی ہے۔ انہوں نے منتخب ہونے کے بعد اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کونسل میں اپنے پہلے خطاب  میں کہاکہ کشمیری عوام انصاف اور عزت کے حصول کے لئے انہی حقوق کے مستحق ہیں جو ساری دنیا کے لوگوں کو حاصل ہیں۔انکا کہنا تھا’’ کشمیری عوام کو  اسی طرح کے انصاف اور عزت کے حقوق حاصل ہیں جو پوری دنیا کے لوگوں کے ہیں اور ہم بھارتی حکام پر زور دے رہے ہیں کہ وہ اسے تسلیم کریں‘‘۔کمیشن برائے انسانی حقوق کے 39ویں اجلاس کے دوران انہوں نے اپنے خطاب میں کہاکہ جس طرح دنیا کے دیگر ممالک میں رہ رہے لو گوں کو عزت اور وقارسے حقوق فراہم کئے جاتے ہیں اسی طرح کشمیری عوام کو بھی حقوق فراہم کئے جانے چاہئیں ۔انہوں نے بھارت پر زور دیا کہ وہ ریاست جموں کشمیر میں رہائش پذیر لو گوں کو برابر حقوق فراہم کرتے ہو ئے کسی بھی پا مالی کا بر وقت اور سنجیدہ نو ٹس لیکر اپنی منصبی زمہ داری کو پورا کرے ۔انہوں نے اقوام متحدہ کے کمیشن برائے انسانی حقوق کی طرف سے سر حد کے دو نوں اطراف رسائی کی اپیل دہراتے ہو ئے دو نوں ملکوں پر زور دیا کہ وہ انسانی حقوق کی پامالیوں سے متعلق شکایا ت کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کا مو قع فراہم کریں ۔انکا کہنا تھا’’ اقوام متحدہ انسانی حقوق کونسل کا آفس اس بات کی لگاتار اپیلیں کرتا رہے گا کہ انہیں لائن آف کنٹرول کے دونوں جانب کا دورہ کرنے کی اجازت دی جائے اور ساتھ ہی لائن آف کنٹرول کی صورتحال پر نظر رکھی جائے گی اور اسے رپورٹ کیا جائیگا۔واضح رہے مائیکل بیچ لسٹ کے پیش رو زید الرائد حسین نے دونوں ممالک پر زور دیا تھا کہ انہیںسرحد کے دونوں اطراف کا جائزہ لینے کی رسائی فراہم کی جائے تاکہ کمیشن ریاست جموں وکشمیر کے آر پار انسانی حقوق کی پامالیوں سے متعلق شکایات کا غیر جانبدارانہ بین الاقوامی کمیشن کے ذریعے تحقیقات عمل میں لاکر حقائق کومنظر عام پرلائیں۔اس موقعے پر حسین نے ہندو پاک کی مملکتوں پر زور دیا تھا کہ وہ کشمیری عوام کی طرف سے شروع کی گئی تحریک حق خود ارادیت کا احترام کرتے ہوئے انہیں اپنے سیاسی مستقبل کا فیصلہ کرنے کا موقعہ فراہم کریں۔