تازہ ترین

آپسی رقابت کاہلاکت خیز نتیجہ

ٹنگمرگ میں نوجوان جان سے ہاتھ دھو بیٹھا،15روز بعد لاش ملی،2گرفتار

10 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

مشتاق الحسن
 
ٹنگمرگ// ٹنگمرگ میں چند روز قبل لاپتہ ہوئے نوجوان طالب علم کی لاش برآمد کی گئی ہے جبکہ پولیس کے مطابق اس معاملے میں مقتول نوجوان کے دو قریبی رشتہ داروں کو حراست میں لے لیا گیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق ٹنگمرگ سے 10 کلو میٹر دور کھی پورہ بالا میں 23 اگست کی شام کوپوسٹ گریجویشن کرنے والا 26 سالہ طالب علم معراج الدین تیلی ولد عبدالمجید تیلی گھر سے باہر نکلتے ہی اچانک لاپتہ ہوگیا اگرچہ لاپتہ ہونے کے ساتھ ہی اس کے لواحقین اور رشتہ داروں نے اسے ہر ممکن جگہ پر تلاش کیا تاہم جب مذکورہ بازیاب نہ ہوا تو لواحقین نے اس کی گمشدگی کی رپورٹ پولیس تھانہ ٹنگمرگ میں درج کرائی۔ پولیس نے اسکی تلاش شروع کرنے کے لیے کاروائی شروع کی جس دران پولیس نے شک کی بنیاد پر نصف درجن افراد کو حراست میں لے لیا ۔ذرائع کے مطابق پولیس کو اسوقت بڑی کامیابی حاصل ہوئی جب اس نے امتیاز احمد وانی ولد غلام محی الدین وانی ارشاد احمد وانی ولد غلام احمد وانی ساکنان کھی پورہ بالا کو گرفتار کر کے ان سے پوچھ تاچھ کی جس دران دونوں نے جرم قبول کرتے ہوئے اس بات کا اقرار کیا کہ انھوںنے ہی 23 اگست شام کومعراج الدین تیلی کو اغوا کر کے پھانسی دی اور اس کی لاش کو نزدیکی نالے کے کنارے دفنا دیا ۔بعد میں پولیس نے سب ڈویڑنل مجسٹریٹ اور فارنسک ماہرین کی نگرانی میں رات کی تاریکی کے دران نالے سے لاش برآمد کرکے پولیس تھانہ ٹنگمرگ پہنچائی ۔اور اتوار کی صبح لاش کا ڈسڑکٹ اسپتال بارہ مولہ میں پوسٹ مارٹم کرنے کے بعد ضروری کاروائی عمل لانے کے ساتھ آخری رسومات کی خاطر لواحقین کے حوالے کی۔اس سلسلے میں اتوار کو ایس ڈی پی ٹنگمرگ امتیاز احمد اور ایس ایچ او سعادت علی نے مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران تفصیلات پیش کیں۔ٹنگمرگ پولیس نے اس سلسلے میں باضبط طور ایف آئی آر زیر نمبر 75 سال 2018 انڈر سکیشن 302 درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے  ادھر جونہی مقتول نوجوان کی لاش آبائی گاوں لائی گئی تو وہاں کہرام مچ گیا۔مقامی سیول سوسائٹی نے پولیس کو کیس کی تہہ تک پہنچنے کے لئے اپنا تعاون فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ھے ۔نماز جنازہ کے بعد سسینکڑوںلوگوں کی موجودگی میں اشک بار انکھوں سے معراج الدین تیلی کو سپرد خاک کیا گیا۔