تازہ ترین

ریاست میں قومی لوک عدالتوں کا انعقاد۔10,528کیسوں کانپٹارا

سرینگر ہائی کورٹ کمپلیکس میں سب سے بڑی تقریب، جسٹس آلوک ارادھے نے افتتاح کیا

9 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

سرینگر//ایگزیکٹو چئیر مین جے کے سٹیٹ لیگل سروسز اتھارٹی جسٹس آلوک ارادھے نے چئیر مین جے اینڈ کے ہائی کورٹ لیگل سروسز کمیٹی جسٹس علی محمد ماگرے کی موجودگی میں اے ڈی آر سنٹر ہائی کورٹ کمپلیکس سرینگر میں قومی لوک عدالت سیشنز کا افتتاح کیا ۔ریاست بھر میں کل مختلف لوک عدالتوںمیں14,166کیسوں کی سماعت کی گئی جن میں سے 10,528کیسوں پر باہمی فیصلے ہوئے اور اس سلسلہ میں 17کروڑ 83لاکھ روپے باہمی مفاہمیت کے معاوضہ کے طور پر منظور کئے گئے۔ ان کیسوںمیں بینک واجبات کی ادائیگی، بجلی و پانی کے بلوں کے معاملات، اراضی معاوضے و دیگر معاملات شامل تھے۔ سرینگر میں ہوئی افتتاحیتقریب سے خطاب کرتے ہوئے جسٹس آلوک ارادھے نے کہا کہ لوک عدالت منعقد کرانے کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ سماج کے پچھڑے طبقے کو مفت اور معیاری قانونی خدمات دستیاب کرائی جا سکیں تا کہ انہیں انصاف مل سکے اور وہ اقتصادی اور دیگر وجوہات کی بنا پر سہولیات سے محروم نہ رہ سکیں ۔ انہوں نے کہا کہ لوک عدالتوں کی بدولت قانونی نظام عملانے میں مدد ملتی ہے اور اس کے ساتھ ساتھ مساوی بنیادوں پر انصاف کے تقاضوں کو فروغ دینے میں بھی مدد ملتی ہے ۔ جسٹس ماگرے نے خطاب کرتے ہوئے وہاں موجود فریقین پر زور دیا کہ وہ قانونی داؤ پیچوں میں پھسنے کے بجائے آپسی افہام و تفہیم کے ذریعے سے معاملات نمٹائیں ۔ انہوں نے کہا کہ لوک عدالتوں کی بدولت خرچوں میں کمی آتی ہے اور معاملات حل کرانے میں وقت بھی ضایع نہیں ہوتا ہے ۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ زیادہ سے زیادہ معاملات نمٹانے کیلئے لوک عدالتوں کو ریفر کئے جائیں گے ۔ ہائی کورٹ سرینگر میں تشکیل دئیے گئے دو بنچوں کے سامنے آج مختلف نوعیت کے 210 کیس شنوائی کیلئے رکھے گئے ۔ پہلے بنچ کی سربراہی کملیش پنڈتا فورتھ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشنز جج کر رہے تھے جبکہ دوسرے بنچ کی سربراہی محمود احمد چودھری ڈسٹرکٹ اینڈ تھرڈ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشنز جج سرینگر نے کی ۔ ممبر سیکرٹری جے کے ایس ایل ایس اے یشپال بھورنی ، سیکرٹری ہائی کورٹ لیگل سروسز کمیٹی عبدال ناصر اور انڈر سیکرٹری جے کے ایس ایل ایس اے انل کمار چودھری بھی اس موقعہ پر موجود تھے ۔