تازہ ترین

حکومت چنائو کے انعقاد میں سنجیدہ نہیں :پردیش کانگریس

الیکشن کمیشن کی طرف سے نوٹیفکیشن جاری ہونے تک پارٹی اپنافیصلہ محفوظ رکھے گی

9 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

یوگیش سگوترہ
جموں//کانگریس نے الزام عائد کیاہے کہ حکومت میونسپل اور پنچایت چنائو کیلئے سنجیدہ نہیں ۔کانگریس کے ریاستی صدر غلام احمد میر نے جموں میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بی جے پی کی طرف سے مرکز میں اقتدار سنبھالنے اور ریاست میں اتحادی حکومت تشکیل دینے کے بعدپہلے ہی روز سے الیکشن کروانے کا اعلان ہوا اور یہ اعلان بارہا ہوئے تاہم زمینی سطح پر خراب حالات کے سبب اب تک اس کا انعقاد نہیں ہوسکااور انہیں اس بار بھی خدشہ ہے کہ ریاستی گورنر کی طرف سے چنائو کا اعلان پھر سے کہیں مذاق بن کر نہ رہ جائے کیونکہ ابھی تک الیکشن کمیشن کی طرف سے چنائو کیلئے نوٹیفکیشن جاری نہیں کیاگیا جبکہ اعلان کے مطابق چنائو کو کچھ ہی ہفتے باقی رہ گئے ہیں ۔میر نے کہاکہ گورنر کو زمینی سطح کے حالات کا جائزہ لیناچاہئے اور تمام سیاسی جماعتوں کو اعتماد میں لیتے ہوئے چنائو کی تاریخوں کا اعلان کرناچاہئے ۔ان کاکہناتھاکہ اس عمل کے حوالے سے شکوک و شبہات اور ابہام پایاجارہاہے ۔ان کاکہناتھاکہ یہی بھاجپا حکومت لوک سبھا کے اننت ناگ حلقے میں ضمنی چنائو کروانے میں ناکام ہوگئی جس کو پولنگ کے ایک روزپہلے ملتوی کردیاگیا۔انہوں نے کہاکہ پہلے بھی پنچایتی چنائو کا اعلان ہوامگر اسے بعد میں ملتوی کیاگیا۔این سی صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی طرف سے الیکشن کے بائیکاٹ کے اعلان پر میر نے کہا’’یہ آرٹیکل(دفعہ35اے )عدالت میں چیلنج کیاگیاہے اور یہ معاملہ 2014سے سپریم کورٹ میں ہے ،جس کے بعد این سی نے کئی انتخابات میں حصہ لیا اور فاروق عبداللہ نے خود کم ترشرح ووٹنگ ہونے کے باوجود سرینگر سے لوک سبھا کا الیکشن جیتا ،آج کرگل کونسلر وں کیلئے حلف لینے والی واحد پارٹی این سی ہے ،انہوں نے لیہہ چنائو میں حصہ لیا اس لئے بائیکاٹ کال اتنی آسان نہیں جتنی دکھائی دیتی ہے ،اس میں بہت سی کچھ اور چیزیں بھی ہیں کیونکہ فاروق عبداللہ وہی شخص ہیں جنہوں نے سرینگر میں ایک تقریب کے دوران الیکشن کیلئے گورنر کی حمایت کی تھی ‘‘۔میر کاکہناتھاکہ یہ تمام باتیں تاخیری حربے ہیں ، حالات سے شروع ہوتے ہیں اور ریاست میں موسم سرما پر ختم ہوں گے ۔تاہم انہوں نے کہاکہ کانگریس تب تک الیکشن کے حوالے سے اپنا فیصلہ محفوظ رکھے گی جب تک الیکشن کمیشن کی طرف سے اس حوالے سے نوٹیفکیشن یا کلینڈر جاری نہیں کیاجاتا۔اس سے قبل پانچ ستمبر کومیر نے کہاتھاکہ کانگریس چنائو سے بھاگ نہیں رہی اورنہ ہی کسی الیکشن کا بائیکاٹ کرتی ہے تاہم خراب سیکورٹی حالات پر کچھ تحفظات ہیں ۔