تازہ ترین

شیخ محمد عبداللہ کو 36ویں برسی پر خراج عقیدت

مزار پرفاتحہ خوانی کی مجلس ، ریاست کے تینوں خطوں میں تقریبات منعقد

9 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

سرینگر//نیشنل کانفرنس کے بانی شیخ محمد عبداللہ کا 36واں یوم وصال ریاست کے تینوں خطوں میں منایا گیا۔ صبح سویرے ہی مرحوم کے مقبرہ واقع نسیم باغ میں قرآن خوانی کی مجلس کا انعقاد ہوا اور ان کے تاریخ ساز سیاسی ، ملی خدمات پر روشنی ڈالی گئی۔ تمام ضلع ، تحصیل اور بلاک سطحوں پر بھی خراج عقیدت کی تقریبات کا انعقاد ہوا۔ نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے نسیم باغ میں مزارپر گلباری اور فاتحہ خوانی کی۔ اُنہوں نے مادر مہربان بیگم اکبر جہاں کی قبر پر بھی گلباری اور فاتحہ خوانی کی۔ اجتماعی فاتحہ خوانی میں پارٹی کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر ، معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفیٰ کمال، صوبائی صدر ناصر اسلم وانی، سینئر لیڈران عبدالرحیم راتھر، چودھری محمد رمضان، میاں الطاف احمد، مبارک گل، میر سیف اللہ، محمد اکبر لون، نذیر احمد خان گریزی، سکینہ ایتو، علی محمد ڈار، شیخ اشفاق جبار، تنویر صادق، ایڈوکیٹ شوکت احمد میر، پیر آفاق احمد، محمد سعید آخون، قیصر جمشید لون، جاوید احمد ڈار، ڈاکٹر بشیر احمد ویری، ایڈوکیٹ عبدالمجید لارمی، شوکت حسین گنائی، ڈاکٹر محمد شفیع، میر غلام رسول ناز، سلمان علی ساگر اورعمران نبی ڈار کے علاوہ کئی سرکردہ لیڈران نے شرکت کی۔ادھر جموں میں شیر کشمیر بھون میں بھی تقریب پر شیخ محمد عبداللہ کو خراج عقیدت پیش کیا گیا اور مرکزی اور صوبائی لیڈران نے مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ’’شیخ صاحب فرقہ دارانہ ہم آہنگی اور تینوں خطوں کے عظیم ورثہ یعنی بھائی چارہ اور ہندو ، مسلم ، سکھ اتحاد کے علمبردار تھے‘‘ ۔مقررین نے کہاکہ شیخ محمد عبداللہ نے ہمیشہ تشدد سے نفرت کی اور زندگی بھر عدم تشدد کے حامی رہے۔ کرگل، لداخ اور خطہ چناب و پیرپنچال میں بھی اس سلسلے میں تقریبات منعقد ہوئیں۔