تازہ ترین

خطاب کے لئے جوکووچ کا پوترا سے مقابلہ

9 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نیویارک/ سربیا کے نوواک جوکووچ نے لگاتار سیٹوں میں جیت حاصل کرتے ہوئے آخری گرینڈ سلیم یو ایس اوپن کے فائنل میں داخلہ حاصل کرلیا جہاں اب خطاب کے لئے ان کا مقابلہ ارجنٹینا کے جوآن مارٹین ٹیل پوترو سے ہوگا ۔ پوترو کو دنیا کے نمبر ایک کھلاڑی اسپین کے رافیل نڈال کے ریٹائرڈ ہوکر میچ چھوڑنے کے بعد آسانی سے فائنل کا ٹکٹ ملا ہے ۔مرد سنگلز سیمی فائنل میں جوکووچ نے جاپان کے کیئی نشی کوری کو لگاتار سیٹوں میں 6۔3، 6۔4، 6۔2 سے ہرایا۔ جوکووچ کا اب اس برس لگاتار دوسرے گرینڈ سلیم خطاب کے لئے پوترو سے مقابلہ ہوگا۔ جن کے خلاف سابق چمپئن اور ٹاپ سیڈ نڈال نے دوسرے سیٹ میں میچ چھوڑ دیا۔اس برس ومبلڈن خطاب جیتنے والے سربیائی کھلاڑی نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے جاپانی کھلاڑی پر لگاتار دبا¶ بنایا اور 17 بریک پوائنٹ کے موقعے بنائے نیز پہلے سرو پر 80 فیصد پوائنٹ حاصل کئے ۔ جوکووچ نے دو گھنٹے 23 منٹ میں میچ جیت لیا۔دو بار کے یو ایس اوپن چمپئن جوکووچ نے آٹھویں بار یہاں فائنل میں داخلہ حاصل کیا ہے ۔ چھٹی سیڈ کھلاڑی نے پہلے ہی سروس گیم پر نشی کوری کی سروس بریک کی اور پہلا سیٹ ایس پر صرف 37 منٹ میں جیت لیا۔ جوکووچ نے میچ کے بعد کہا کہ مجھے بہت اچھا محسوس ہورہا ہے ۔ نشی کوری کے خلاف اچھے شاٹس کھیلنے پڑتے ہیں۔ وہ بہت تیز ہیں۔نشی کوری نے دوسرے سیٹ میں بہتر کھیل دکھایا لیکن جوکووچ کے سامنے وہ بہت کچھ نہیں کرسکے ۔ سربیائی کھلاڑی نے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ اہم موقعوں پر میں نے اچھا کھیل دکھایا اور دوسرے سرو پر میں بہتر تھا اور کورٹ پر اچھے سے بھاگ رہا تھا۔ میں نے نشی پر لگاتار دبا¶ بنایا اور اس سے ان کی کارکردگی متاثر ہوئی۔ یہ اچھا میچ تھا۔ جاپانی کھلاڑی نے 51 بیجا غلطیاں کیں۔اکتیس سالہ سربیائی کھلاڑی کو نشی کوری نے سال 2014 میں شکست دی تھی۔ اس جیت کے ساتھ جوکووچ نے جاپانی کھلاڑی کے خلاف اپنا کریئر ریکارڈ 17 میچوں میں 15 جیت کے ساتھ مزید مضبوط کرلیا ۔جوکووچ گزشتہ برس کُہنی کی چوٹ کے سبب یو ایس اوپن نہیں کھیل سکے تھے ۔ وہ سرجری کے بعد اس برس واپسی کررہے ہیں۔