تازہ ترین

۔100 لفظوں کی کہانیاں

9 ستمبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

پرویز انیس

بریکنگ نیوز

رپورٹر بھاگتا ہوا ایڈیٹر کے کیبن میں داخل ہوا
رپورٹر ۔ سر، ایک بریکنگ نیوز ہاتھ لگی ہے ، دو لوگوں کے آئی آیس آئی سے گہرے تعلقات ہیں اور ہمارے ہاتھ اس کے کافی دستاویز لگے ہیں۔
ایڈیٹر:۔  واقعی، یہ بہت بڑی خبر ہے ہمارے چینل کی ٹی آر پی آسمان چھولے گی، یہ بتاؤ وہ کہاں سے ہیں اور انکا نام کیا ہے۔
رپورٹر:۔ یوپی کے ہیں اور انکا نام منوج اور سنتوش ہے۔
ایڈیٹر:۔ (مایوسی بھرے لہجے میں) یہ کوئی بریکنگ نیوز نہیں ، جاؤ اور ٹی آر پی بڑھانے والی خبر لاؤ۔
رپورٹر کیبن سے سر جھکائے نکل گیا۔

قبر

وہ اپنے کروڑپتی دوست کی میت میں گیا تھا۔ جس کا اچانک دل کا دورہ پڑنے سے انتقال ہوگیا تھا۔ جنازہ کی نماز کے بعد جب جنازہ کو قبر کے پاس رکھا گیا تو اس کی نظر بغل میں کھودی گئی ایک اور قبر پر پڑی۔ تھوڑی دیر میں وہ جنازہ بھی آگیا اور دونوں میتوں کی تدفین قریب قریب ایک ساتھ ہی کی گئی۔ مٹی دینے والے بھی سبھی لوگ وہی تھے۔تبھی دریافت کرنے پر اسے  پتہ چلا کہ یہ ایک بھکاری کی قبر ہے۔ وہ بہت دیر تک خاموش کھڑا دونوں قبروں کو بڑی غور سے دیکھتا رہا۔

لنچنگ

میں معمول کے مطابق  رات میں ٹی وی پر دن بھر کی نیوز دیکھنے بیٹھ گیا۔ آج ملک کے مختلف گوشوں میں کئی نوجوان "موب لنچنگ" کا شکار ہو کر اپنی جانیں گنوا چکے تھے۔ ان خبروں نے مجھے بہت زیادہ بے چین کردیا تھا ۔ اسی بے چینی میں، میں نے ٹی وی بند کیا اور ٹہلنے لگا۔ ٹہلتے ٹہلتے مجھے بچوں کی یاد آئی ، میں نے بغل کے کمرے کا دروازہ کھول کر دیکھا تو دونوں بچے گہری نیند سورہے تھے۔ میں تھوڑی دیر کھڑا انھیں دیکھتا رہا اور پھربستر پر جاکر سوگیا مانو کچھ ہوا ہی نہیں تھا۔

پلاننگ

فلائٹ سے گھر لوٹتے وقت وہ بہت خوش تھا۔ وہ ہمیشہ سے چاہتا تھا کہ اتنے پیسے کمائے کہ باقی زندگی بیوی بچوں کے ساتھ آرام سے کٹ جائے۔ اس کے لئے وہ بیس سال سے بیوی بچوں سے دور پردیس میں خون پسینہ ایک کررہا تھا۔ لیکن آج  وہ خوش تھا کہ اب اسے واپس نہیں آنا ہے اور اب بیوی بچوں کی شکایت بھی دور ہو جائے گی کہ وہ ان کے ساتھ وقت نہیں گذارتا۔
وہ انھیں خیالوں میں گم تھا تبھی جہاز حادثہ کا شکار ہوگیا اور سارے مسافر اپنی آخری منزل پر پہنچ چکے تھے۔
 
کامٹی ناگپور مہاراشٹر،9049548326