تازہ ترین

غزلیات

12 اگست 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

مری نظر کو مہکتے گلاب کیا دو گے
کہ نیند دے نہ سکے تم تو خواب کیا دو گے
 
میں خود دکھاؤں گا دُکھتی رگیں کہاں ہیں مری
جو تم بتاؤ کہ اب کے عذاب کیا دو گے
 
تمہارے پاس تو آ جاؤں جی کڑا کرکے
سِوا تپش کے تم اے آفتاب کیا دو گے
 
شمار لمحوں کا، تفصیل بیتی گھڑیوں کی
غروبِ شامِ تمنا حساب کیا دو گے
 
یہ خامشی بھی عجیب امتحان ہے بلراجؔ
سوال ہی نہیں کوئی جواب کیا دو گے
 
بلراج ؔبخشی
۱۳/۳، عید گاہ روڈ ، آدرش کالونی
 اُدہم پور- ۱۸۲۱۰۱(جموں کشمیر)
 موبائل نمبر؛09419339303
 
 
وہ کہ ہر پل مری سانسوں میں رواں رہتا ہے
میرے اندر ہی مرا دشمنِ جاں رہتا ہے
پھیر لیں تم نے جو نظریں تو بکھر جائے گا
خواب آنکھوں میں بہت دیر کہاں رہتا ہے
دیکھتا ہوں تری صورت تو نکھر جاتا ہوں
دلِ افسردہ میں اک سوزِ نہاں رہتا ہے
ایک پیماں ہے کہ مرنے نہیں دیتا ورنہ
غمِ فرقت میں بھلا کون یہاں رہتا ہے
عشق ہو جائے تو پھر جان بھی جا سکتی ہے
اس تجارت میں کہاں سود و زیاں رہتا ہے
اجنبی کون ہو, اس شہر سے نسبت کیسی
تم کو معلوم ہے جاویدؔ کہاں رہتا ہے؟
 
سردار جاوید خان
پتہ؛ مہنڈر، پونچھ
رابطہ ؛ 9697440404
 
 
میں سُنوں گاہرکہانی آپ کی 
خو‘ب ہوگی یہ زبانی آپ کی 
 
آپ کی مخمور آنکھیں کیاکہوں 
کررہی ہیں ترجمانی آپ کی 
 
کیاکہوں میری کہانی سے بُہت
مِلتی جُلتی ہے کہانی آپ کی 
 
آپ کامُدّت سے تھامیں مُنتظر
آپ آئے مہربانی آپ کی 
 
آپ کے دِل میں ہیں جِتنے بھی خیال 
کاش سُن لیتے زبانی آپ کی 
 
مڑکے دیکھا دل نے یکدم آگئیں
یاد وہ باتیں پرانی آپکی
 
کیا کریں تعریف شعروں کی ہتاشؔ
اُس پہ شعروں میں روانی آپ کی 
 
پیارے ہتاشؔ
دور درشن گیٹ لین جانی پورہ جموں
موبائل نمبر؛8493853607
 
مقصدِ نُکتہ چیں مختصر
دُشمنِ بے یقیں مختصر
آج کی شام کو دے پتہ 
اُلفتیں رہ گئیں مختصر
اِک شکستہ دلی اور غم
سلسلہ ہے نہیں مختصر
ہمسفر مردِ نازُک ارے
رہ گیا مہ جبیں مختصر
طاقتوں کے لئے آرزو
کچھ لگے ہمنشیں مختصر
گر نہیں وہ مکان وزماں
حوصلہ ہے نہیں مختصر
ہم سا کوئی نہیں کیا کریں
اک ہمیں ہیں حسیں مختصر
آدمی، رفعتیں ،  آگہی
ربط بھی ہے کہیں مختصر
ایک تیمورؔ ہو اُس طرف
اِس طرف کی زمیں مختصر
 
تیمور احمد خان
اوٹنگرو ہندوارہ
موبائل نمبر؛9622511809
 
 
اُس نے تیور بھی مخالف ہی دکھائے اپنے
جس کی چاہت میں شب وروز لُٹائے اپنے
کون ہے جگ میں تمہارا بھی سوائے اپنے
جس جہاں میں کئی اپنوں نے ستائے اپنے
کیوں اُڑانوں نے سبھی ہوش اُڑائے اپنے
جب سے آنکھوں میںکئی خواب سجائے اپنے
کس طرح دُور وہی گھر ہیں بسائے اپنے
جن کی خاطر کسی نے گھر بھی لُٹائے اپنے
روز چھپ چھپ کے میں نے اشک بہائے اپنے
’’خُرد بینوں سے کئی داغ چھپائے اپنے‘‘
کرسکے نہ وہ مداوا ہی کسی کاکچھ بھی
جن طبیبوں کو کبھی زخم دِکھائے اپنے
شادماں ہے تو خفا بھی یہ رہی ہے ہم سے 
زندگی نے تو کئی رنگ دِکھائے اپنے
 
عبدالجباربٹ۔کشتواڑی
گجر نگر، جموں
موبائل نمبر؛9906185501
 
 
یہ ٹوٹا دل سنبھل جائے، اگر تم ملنے آجاؤ
ہوا کا رخ بدل جائے، اگر تم ملنے آجاؤ
ترا دیدار کرنے کے لئے ہوں منتظر کب سے
یہ ارماں بھی نکل جائے، اگر تم ملنے آجاؤ
نہ جانے کب سے دلبر دل مرا ہے مبتلائے غم
خوشی سے دل مچل جائے، اگر تم ملنے آجاؤ
سوا تیرے مری یہ زندگی کس کام کی جاناں
زمانہ ہم سے جل جائے، اگر تم ملنے آجاؤ
گلوں کے زرد چہروں پر نئی اک تازگی لوٹے
کوئی جادو سا چل جائے، اگر تم ملنے آجاؤ
سوا تیرے نہیں کوئی یہاں ہم درد بسمل ؔکا
قضا کا وقت ٹل جائے، اگر تم ملنے آجاؤ
 
سید بسملؔ مرتضٰی
شانگس اننت ناگ کشمیر
موبائل نمبر؛9596411285
 
 
کوئی مشکل جو کبھی پیشِ نظر  ہوتی ہے
خُوئے اُلفت تبھی پیوستِ جگر ہوتی  ہے
 
میری ہر صبح جوابوں کی طلب رکھتی ہے
اور ہر شام سوالوں پہ نظر ہوتی ہے
 
تری فرقت میں سوالات سے مضروب یہ دل
جیسے نیزوں کے مقابل میں سپر ہوتی ہے 
 
ہم نہ سمجھے کہ مقدر بھی کوئی شئے ہوگی 
 بس یہ مانا کہ دعائوں میں اثر ہوتی ہے 
 
میں نے خوابوں کو حقیقت کی قبا پنہا دی 
دید اُن کی بھی حقیقت میں کدھر ہوتی ہے
 
میری رفعت کا نہیں دور تلک کوئی گواہ
میری پستی کی زمانے کو خبر ہوتی ہے 
 
غم ِ فرقت میں کوئی زیست سے کیوں ہارے
زندگی لاکھ دعائوں کا ثمر ہوتی ہے
 
وسیم ساغرؔ
ہردوشیواہ سوپور
رابطہ؛7006452075
 
 
میرا رونا مری ہنسی تنہا
زندگی ہے گزر رہی تنہا
 
شہرِ الفت بسانے والا آج
ہے بھٹکتا گلی گلی تنہا
 
بھیڑ میں اس قدر ہے تنہائی
موت تنہا ہے زندگی تنہا 
 
تیرے جانے کے بعد گاؤں میں
چاند تنہا ہے چاندنی تنہا
 
گُنگناتے ہیں وصل کے نغمے
ہجر زادے کبھی کبھی تنہا
 
مجھ میں رہتی ہے اب دھواں بن کر
گرم یادوں کی اک صدی تنہا
 
پھر حویلی میں آگئی رہنے
کوئی دلہن نئی نئی تنہا
 
رہ گیا کٹ کے آدمیّت سے
دورِ حاضر کا آدمی  تنہا
 
پہلے بھی تھا کوئی کوئی ہوتا
اب تو  شیدّؔا ہے ہر کوئی  تنہا
 
علی شیداّؔ
(نجدہ ون) نپورہ اسلام آباد کشمیر
 فون نمبر9419045087